ممبئی: ملک میں پٹرول وڈیژل کی قیمتوں میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے جس کی تمام تر ذمہ داری مرکزی حکومت پر عائد ہوتی ہے۔ ایندھن کی قیمتوں میں ہورہے اس مسلسل اضافے سے عوام پریشان ہوچکے ہیں جس کے لیے مہاراشٹر یوتھ کانگریس نے آج سڑکوں پر اترکر ایندھن کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف احتجاج کیا۔

ایندھن کی قیمتوں میں ہورہے مسلسل اضافے کے خلاف مہاراشٹر پردیش یوتھ کانگریس کے صدرستیہ جیت تانمبے کی قیادت میں ’وشواش گھات آندولن‘ کیا گیا۔ یہ احتجاج ریاست بھر کے تمام شہروں وتعلقہ جات پر بہ یک وقت کیا گیا۔ چونکہ ایندھی کی قیمتوں میں مسلسل اضافے سے عوام بری طرح پریشان ہیں اس لیے اس احتجاج میں عوام کی بڑی تعداد شریک ہوئی۔ ستیہ جیت تانمبے نے میرا بھائندر شہر کا دورہ کیا جہاں انہوں نے مقامی فنکاروں سے ملاقات کی اور ان کے مسائل کے بارے میں آگاہی حاصل کی۔ اس موقع پر انہوں نے میرا روڈ بھائندر شہر میں ’وشواش گھات آندولن‘ کی قیادت کرتے ہوئے مرکز کی مودی حکومت کے خلاف زبردست تنقید کی۔ انہوں نے کہا کہ سب کا ساتھ سب کا وکاس کا نعرہ لگا کر مودی 2019میں دوبارہ اقتدار میں آئے۔ انہوں نے لوگوں کو یقین دلایا تھا کہ ایندھن وکوکنگ گیس کی قیمتیں کم ہونگی مگر اقتدار میں آنے کے بعد سے اس کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ کیا۔ جبکہ دیگر معاملات میں وزیراعظم نریندرمودی نے عوام کا وشواش گھات کیا۔ اس لیے مہاراشٹر پردیش یوتھ کانگریس نے مودی حکومت کے خلاف ریاست گیر سطح پر ’وشواش گھات آندولن‘ کا انعقاد کیا ہے۔