مودی وشاہ کے اشارے پرخودساختہ جی23لیڈران کی سازش: ناناپٹولے

21

گاندھی خاندان پر جھوٹے الزامات عائد کرنے والے غلام نبی آزاد احسان فراموش

ممبئی:کانگریس پارٹی نے جن لیڈروں کو مختلف عہدے دیئے، عزت واحترام دیا اور اگر انہیں دوبارہ کوئی عہدہ نہیں ملا تو ایسے لوگ اپنی مفاد پرستی اور خودغرضی کے سبب کانگریس پارٹی چھوڑ رہے ہیں۔ جس گاندھی خاندان نے ایسے لیڈروں کو تمام اہم عہدے دیئے آج وہی گاندھی خاندان کے خلاف جھوٹے الزامات عائد کررہے ہیں۔غلام نبی آزاد کو بھی پارٹی اور گاندھی خاندان نے 50سالوں میں تمام اہم عہدے دیئے لیکن آزاد وخودساختہ جی23لیڈران مودی وشاہ کے اشارے پر سازش کررہے ہیں۔یہ سنگین الزام آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدرناناپٹولے نے عائد کیا ہے۔

ناناپٹولے مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی تربیتی کمیٹی کی جانب سے نئی ممبئی میں منعقددو روزہ تربیتی کیمپ میں شرکاء سے خطاب کے بعد میڈیا سے بات کررہے تھے۔ انہو ں نے کہا کہ جیسے ہی میں نے پارلیمنٹ کی رکنیت سے استعفیٰ دیا اگلے ہی دن میرے بنگلے کی بجلی اور پانی کا کنکشن کاٹ دیا گیا لیکن غلام نبی آزاد کے کسی بھی ایوان کے رکن نہیں ہونے کے باوجود دہلی میں ان کا سرکاری بنگلہ اور سہولیات اب بھی موجود ہیں۔ وہ مودی وشاہ کے اشارے پر کانگریس کو بدنام کر رہے ہیں۔ آج ملک نہایت سنگین صورتحال سے گزر رہا ہے، سرحد پر چین کی سرگرمیاں بڑھ گئی ہیں، آئین خطرے میں ہے، بی جے پی پر سوال کرنے کے بجائے یہ لیڈران کانگریس پارٹی کو ہی بدنام کررہے ہیں۔

کانگریس کے ریاستی صدرنے مزید کہا کہ آج بی جے پی پورے ملک میں ہائی وے کا جال بچھانے کا ڈھنڈورا پیٹ رہی ہے لیکن اس کے لیے حاصل کیے گئے قرض پر ماہانہ 44ہزار کروڑ روپئے ادا کرنے پڑتے ہیں۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ عوام پر اتنے بڑے قرض کا بوجھ ڈال کراگر ترقی ہوبھی رہی تو بھلا وہ کس کام کی؟ناناپٹولے نے کہا کہ ممبئی گوا ہائی وے کی مرمت گزشتہ 12/سال سے التواء کا شکار ہے، گڑھوں کو بھرنے کی ہدایت دینے کے باوجود بھرے نہیں جارہے ہیں۔ ان گڑھوں کی وجہ سے حادثات ہورہے ہیں جس میں لوگوں کی جانیں جارہی ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ بی جے پی حکومت کے لوگ ہی اس کے ٹھیکیدار ہیں۔ انہیں صرف فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں۔ ملک بھر کے ہائی وے ہوں یا سمردھی مہامارگ ہو اس میں کتنا گناہ چھپا ہوا ہے؟ یہ بہت جلد سامنے آجائے گا۔

نئی ممبئی میں کانگریس کے تربیتی کیمپ کا انعقاد

ناناپٹولے نے کہا کہ آج ملک میں نہایت سنگین مسائل سے دوچار ہے۔ مہنگائی و بیروزگاری میں بے تحاشہ اضافہ ہے، آئین کو پامال کیا جا رہا ہے۔ ملک کی سرحدیں محفوظ نہیں ہیں لیکن مرکزی حکومت ان مسائل کو نظر انداز کر رہی ہے۔مرکزی حکومت کی ان ناکامیوں اور سچائی کو عوام تک پہنچانے کے لیے کانگریس پارٹی نے تربیتی کیمپ کا انعقاد کیا ہے۔ ترقی کا ڈھنڈورا پیٹنے والی بی جے پی کو بے نقاب کرنا اس کیمپ کا اہم مقصد ہے۔ ان کیمپوں میں ہرضلع سے دو کارکنوں کی تربیت کی جائے گی نیز نوجوانوں کو کانگریس پارٹی نے جوڑنے کی کوشش بھی کی جائے گی۔ واضح رہے کہ ریاستی کانگریس کی تربیتی کمیٹی کا کیمپ نئی ممبئی میں منعقدہوا جس میں کمیٹی کے صدر مانک راؤ ٹھاکرے، ریاستی کانگریس کے چیف ترجمان اتل لونڈھے، ایم ایل اے راجیش راٹھوڑ، نئی ممبئی کانگریس کے صدر انل کوشک سمیت کارکنان وعہدیداران موجود تھے۔