مہاراشٹرکی پانچ مساجد میں گنیش مورتی نصب

0 3

ممبئی:18ستمبر ۔(ایجنسیز)مہاراشٹرکی شبیہ سیاسی اورسماجی طورپرایک ترقی پسند ریاست کی رہی ہے۔ اب اس روایت میں ایک نیا باب جڑ گیا ہے۔ ریاست کے کولہاپورضلع میں پانچ مسجدوں میں گنیش کی مورتی نصب کی گئی ہیں۔ یہاں ہندواورمسلمان مل کرریاست کا سب سے بڑا مذہبی جشن منارہے ہیں۔کولہا پورضلع کا کرندو قصبہ اس وقت مذہبی ہم آہنگی کی نئی عبارت لکھ رہا ہے۔ کولہاپور اورسانگلی ضلع کی سرحد پراس برطانوی دورکے شہرمیں پانچ مسجدوں میں گنیش اتسو (جشن) منایاجارہا ہے۔سماجی ہم آہنگی کا پیغام دینے والے کرندومیں گزشتہ کئی برسوں سے مسجد میں بھی گنیش اتسو کا جوش دیکھا جاسکتا ہے، لیکن اس بار36 سال بعد محرم اورگنپتی ایک ساتھ آنے کی وجہ سے شہرمیں مذہبی ہم آہنگی کی حیرت انگیزمثال دیکھنے کو مل رہی ہے۔ اس وجہ سے مسجدوں میں محرم کے پنجے کے ساتھ گنپتی مورتیاں بھی نصب کی گئی ہیں۔شہرکی بیراگ دار، کارخانہ پری، شیلکے، ڈھیپن پوراورکوڑے خان پیرمسجد میں ایک ہی وقت گنپتی اورمحرم کے پنجے کی عبادت ہوتی ہے۔ پوری عقیدت کے ساتھ دونوں مذہبی رسوم ادا کیا جارہا ہے۔ملک کے کئی شہروں میں گنیش اتسواورمحرم ایک ساتھ ہونے کی وجہ سے پولیس کے لئے قانون انتظام بنائے رکھنا بڑا چیلنج بنا ہوا ہے۔ وہیں کرندو قصبے میں پولیس کے لئے ایک طرح سے اس طرح کا کوئی تناو نہیں ہے۔ پولیس بغیرکسی تناوکے سارے ضروری انتظامات میں مصروف ہوگئی ہے۔ امید کی جارہی ہے کہ شہرمیں آئندہ سالوں میں اسی روایت پرعمل کیا جائے گا۔