• 425
    Shares

کابل، 31اگست (یوا ین آئی) طالبان کی سپریم کونسل کا ہفتے کے روز سے پیر تک جاری 3 روزہ اجلاس طالبان کے امیر ملا ہیبت اللہ اخوندزادہ کی زیر صدارت قندھار میں ختم ہوگیا جس میں افغانستان میں حکومت سازی سے متعلق فیصلے کئے گئے۔ طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ٹوئٹ کرکے یہ اطلاع دی ہے۔
انہوں نے بتایا کہ اجلاس میں ملک کی موجودہ سیاسی اور سکیورٹی صورتحال کے ساتھ ساتھ دیگر مسائل پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ اجلاس میں اشیائے ضروریہ کی حفاظت کے ساتھ ساتھ شہریوں کو بنیادی سہولیات کی فراہمی اور ان سے اچھے برتاؤ کا فیصلہ کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ اجلاس میں نئی اسلامی حکومت اور کابینہ کی تشکیل سے متعلق اہم فیصلے بھی کیے گئے ہیں۔


جیو نیوز کے مطابق ترجمان طالبان نے بتایا کہ سپریم لیڈر نے سب کو مکمل ہدایات دے دی ہیں اور ذمہ داریوں سے بھی آگاہ کردیا ہے۔طالبان کی جانب سے تاحال حکومت سازی سے متعلق کوئی اعلان نہیں کیا گیا لیکن رپورٹس سامنے آئی ہیں کہ ملابرادر سپریم کونسل کے اجلاس کے بعد قندھار سے کابل روانہ ہوگئے ہیں اور جلد ہی کابینہ کا اعلان متوقع ہے۔


واضح رہے کہ طالبان نے اعلان کیا تھا کہ آخری امریکی فوجی کے انخلا تک حکومت کا اعلان نہیں کیا جائے گا تاہم ڈیڈ لائن سے ایک دن قبل گزشتہ شب ہی امریکی فوج نے انخلا مکمل کرلیا ہے۔

 طالبان جمعہ کو افغانستان میں نئی ​​حکومت کے قیام کا اعلان کریں گے۔ طالبان ملٹری کمیشن سے وابستہ ایک ذریعہ نے منگل کو یہ اطلاع دی۔ذرائع نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ نئی حکومت کے قیام کا اعلان جمعہ کو ہوگا۔لیکن ابھی تک یہ طے نہیں ہوسکا کہ اس حکومت میں کون شامل ہوں گے اور اس کی ہیئت کیا ہوگی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔