پاک، بھارت میچ سے پہلے رات کے وقت پاکستانی کھلاڑی ہوٹل میں نہیں تھے

0 11

دبئی (اردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 ستمبر2018ء) ایشیا کپ میں بھارت نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کو شکست دے دی جس کے بعد سے کرکٹ پنڈتوں کی جانب سے کھلاڑیوں پر خوب تنقید کی گئی ،پاکستانی کرکٹر میدان میں ذہنی طور پر شکست کھا چکے تھے جس کی وجہ سے بھارتی کھلاڑیوں کی جانب سے پانچ کیچز چھوڑنے جانے کے باوجود پاکستانی ٹیم 162سکور پر آﺅٹ ہو گئی۔اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے سپورٹس صحافی عبد الماجد بھٹی نے حیرت انگیز انکشاف کیا ہے۔نجی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے میچ سے ایک رات پہلے لڑکے ہوٹل میں ہانگ کانگ اور بھارت کا میچ دیکھنے کے بجائے دعوتوں پر گئے ہوئے تھے۔انہوں نے کہا کہ جب پاکستانی ٹیم پر کرفیو ٹائمنگ عائد تھی تو یہ چیزیں دیکھنے میں سامنے نہیں آتی تھیں ،جب کرفیو ٹائمنگ تھی تو میچ سے ایک دن پہلے منیجر کے ساتھ ٹیم کا ڈنر ہوتا تھا جس کے بعد تمام لڑکے ہوٹل میں اپنے کمروں میں چلے جاتے تھے۔

اب کرفیو ٹائمنگ ختم ہو گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں پاکستانی کھلاڑی اپنے دوستوں اور رشتے داروں کی جانب سے دی گئی دعوتوں میں مصروف تھے اور ہوٹل میں بہت کم لڑکے موجود تھے۔یاد رہے کہ ایشیا کپ کے اہم میچ میں بھارت نے پاکستان کو 8 وکٹوں سے شکست دیدی۔ دبئی انٹرنیشنل سٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ میں پاکستان کی پوری ٹیم 162 رنز پر آﺅٹ ہو گئی تھی۔