ایم وی اے کے17؍دسمبر کے مورچے کی تیاریوں کی میٹنگ کا انعقاد

20

ممبئی:بی جے پی لیڈران کے ذریعے قومی شخصیات کی توہین، مہاراشٹروکرناٹک سرحدی تنازعہ نیز شندے وفڈنویس حکومت کی بدعنوانی کے خلاف 17/دسمبر کونکلنے والے مہاوکاس اگھاڑی کے عظیم الشان مورچے کی تیایوں کا سلسلہ زوروشور سے جاری ہے۔ اس ضمن میں مہاوکاس اگھاڑی کے لیڈر وں کی ایک جائزہ میٹنگ ہوئی جس میں مورچے کے راستوں اور دیگر تیاریوں کا جائزہ لیا گیا۔

یہ مورچہ رانی باغ بائیکلہ سے سی ایس ٹی تک جائے گا، جس میں شیوسینا، کانگریس، این سی پی،سماج وادی پارٹی ودیگر پارٹیاں شامل ہونگی۔ اس جائزہ میٹنگ میں مہاوکاس اگھاڑی کے لیڈر وممبرپارلیمنٹ انل دیسائی، ممبرپارلیمنٹ ونائک راؤت، کانگریس کے ریاستی کارگزارصدر محمد عارف نسیم خان، سابق وزیرانل پرب، ملندنارویکر، سابق میئر کیشوری پیڈنیکر، مدھوچوہان، ہیمنت ٹکلے، ایم ایل اے رئیس شیخ سمیت شیوسینا،کانگریس واین سی پی ودیگر پارٹیوں کے لیڈران شامل تھے۔