ایسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس نے قومی زکوة سروے کے حقائق و رپورٹ افشا کی – Waraqu E Taza Online روزنامہ ورق تازہ

ایسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس نے قومی زکوة سروے کے حقائق و رپورٹ افشا کی

ممبئی، 3مئی(یواین آئی ) ملک کی ایک غیر منافع بخش تنظیم ایسو سی ایشن آف مسلم پروفیشنلس (اے ایم پی) نے گذشتہ پانچ برسوں سے زکوة کے مرکزی نظام کے لیے جدو جہد کررہی ہے تاکہ معاشی طور پر کمیونٹی کے پسماندہ افراد کی زندگیوں میں بہتری لائے جاسکے اور انھیں ”زکوة لینے والوں سے زکوة دینے والوں“ میں تبدیل کیا جاسکے، ایک پریس کانفرنس میں اے ایم پی کے صدرعامر ادریسی نے کہا کہ تنظیم گزشتہ ایک دہائی سے بھی زائد عرصے سے تعلیم اور معاشی استحکام کے لیے کوشاں ہے۔

انہوں نے اس موقع پر مزید کہا کہ زکوة اسلام کے پانچ بنیادی ارکان میں سے ایک ہے۔ یہ ان تمام مسلمانوں کے لیے فرض ہے جو دولت کی مخصوص شرط کو پورا کرتے ہوں۔ ایسے تمام مسلمان جن پر زکاة فرض ہے انھیں سالانہ اپنے خاندانی اخراجات نفی کرنے کے بعد اپنی مال و دولت پر ڈھائی فیصد یا اس کا چالیسواں حصہ زکوة کے طور پر دینا ہوتا ہے۔ زکوة نیکی اور تقویٰ کا وہ ذریعہ ہے جس کے ذریعے پسماندہ اور معاشی طور پر کمزور اپنے بھائیوں کی مالی مدد کی جاسکتی ہے مزید یہ سماج اور معاشرے امیر و غریب کے درمیان باہمی آہنگی کا ذریعہ ہے۔ یہ ایک ایسا ذریعہ یا آلہ ہے کہ اگر منظم اور صحیح طریقے سے اس کا اجماع اور تقسیم کا نظم کیا جائے تو اس کے ذریعے وسائل سے محروم کمیونٹی کے افراد کی زندگی کو تبدیل کیا جاسکتا ہے۔

عامر ادریسی کے مطابق مسلم کمیونٹی میں زکوة کے حصول اور تقسیم کے نظام کو کو سمجھنے، اسکی کمی کے اثرات کو جاننے کے لیے اے ا یم پی نے ”قومی زکوة سروے“ کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس ضمن میں جو اقدامات کیے گئے ،ڈاٹا اور حقائق کی بنیاد پر رپورٹ تیار کی گئی۔

مکمل رپورٹ

Salmankhanjpg

باخبر رہیں روزنامہ ورق تازہ کا واٹس ایپ گروپ جوائن کریں

یکطرفہ پیار، لڑکی کے والد کو عاشق نے قتل کردیا
رمضان حیوانیت کو کمزور اور روحانیت کوبڑھاوا دینے والا مہینہ

WARAQU-E-TAZA ONLINE

I am Editor of Urdu Daily Waraqu-E-Taza Nanded Maharashtra Having Experience of more than 20 years in journalism and news reporting. You can contact me via e-mail waraquetazadaily@yahoo.co.in or use facebook button to follow me