اندھیری ضمنی انتخاب میں اگھاڑی کی جیت، بی جے پی اور شندے گروپ کو بڑا طمانچہ

1,049
  • بی جے پی کی تخریب کاری اور آمرانہ سیاست کو منہ توڑ جواب
  • کانگریس اور اس کی اتحادی پارٹیاں مہاراشٹر کے آئندہ انتخابات میں بھی بی جے پی کو شکست دیں گی

ممبئی:اندھیری ایسٹ اسمبلی ضمنی انتخاب میں مہاوکاس اگھاڑی کی امیدوار ریتوجا لٹکے کی زبردست جیت سے یہ واضح ہو گیا ہے کہ شندے- فڈنویس کی ای ڈی حکومت پر عوام کو اعتماد نہیں ہے۔ اس حلقہ انتخاب میں بی جے پی وشندے گروپ کے پاس کوئی طاقت نہیں تھی اس کے باوجود انہوں نے انتخاب لڑنے کی ضد کا مظاہرہ کیا تھا۔لیکن بالآخر بی جے پی کو انتخاب سے اس لیے فرار ہونا پڑا کہ اسے لگا کہ اس کا امیدوار ہرگز جیت نہیں پائے گا۔ بی جے پی وشندے گروپ یہ سخت تنقید مہاراشٹرپردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ناناپٹولے نے کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اندھیری مشرق کے لوگوں نے مہاوکاس اگھاڑی میں اپنا اعتماد ظاہر کرکے بی جے پی وشندے گروپ کی تخریبی سیاست پر ایک زبردست طمانچہ جڑا ہے۔

نانا پٹولے نے کہا کہ شیوسینا کے رمیش لٹکے کے اچانک انتقال کی وجہ سے اندھیری ایسٹ میں ضمنی انتخابات کرائے گئے۔اس الیکشن میں کانگریس پارٹی نے اتحاد کی پیروی کرتے ہوئے شیوسینا کے امیدوار کی حمایت کی۔ مہاراشٹر میں یہ ایک سیاسی روایت ہے کہ اگر کسی رکن کی موت ہو جائے تو اس نشست پر بلا مقابلہ انتخاب ہونا چاہیے، لیکن بھارتیہ جنتا پارٹی نے اس روایت کا احترام نہیں کیا اور نامزدگی فارم داخل کر دیا، لیکن جیسے ہی انہیں معلوم ہوا کہ ان کا انتخاب جیتنا مشکل ہے، اس نے سنسکار کا حوالہ دیتے ہوئے نامزدگی فارم واپس لے لیا۔

درحقیقت بھارتیہ جنتا پارٹی نے کبھی بھی ایسی روایت پر عمل نہیں کیا۔ بی جے پی نے گزشتہ دو تین سالوں میں کولہاپور، دیگلور، پنڈھرپور حلقوں میں ہوئے ضمنی انتخابات میں امیدوار کھڑے کیے تھے، لیکن اس بار اپنی شکست کو دیکھتے ہوئے روایت پر عمل کرنے کا جھوٹا دعویٰ کیا۔

نانا پٹولے نے کہا کہ شندے گروپ نے اس الیکشن میں مرکزی حکومت سے ہاتھ ملا کر شیوسینا پارٹی کا نام اور نشان منجمد کرنے کا گناہ بھی کیا تھا۔ لوگوں کو شندے گروپ اور بی جے پی کی یہ سازش پسند نہیں آئی، اس لیے انہوں نے انہیں ان کی اوقات بتادی۔ کانگریس کے ریاستی صدر نے یقین ظاہر کیا کہ اندھیری میں اگھاڑی کی جیت شندے گروپ اور بی جے پی کے لیے ایک بڑا سبق ہے جو مہاراشٹر میں آنے والے تمام انتخابات میں ان کی شکست کا تعین کرے گی۔