ملک کے لیے قربانی دینے والے گاندھی خاندان پر مودی حکومت کے ذریعے ظلم : کانگریس

19

پولیس فورس کے ذریعے پرامن ستیہ گرہ کو دبانے کی آمرانہ حکومت کی کوشش

ظالم وجابرمودی حکومت کے خلاف ریاست بھر میں کانگریس کا پرامن ستیہ گرہ

ممبئی:مرکز کی نریندر مودی حکومت نے اپوزیشن کو ختم کرنے کی سیاست شروع کر دی ہے جس کے لیے مرکزی ایجنسیوں کا بے دریغ سیاسی استعمال کرتے ہوئے جبر کیا جا رہا ہے۔ چونکہ کانگریس پارٹی، سونیا گاندھی و راہل گاندھی مرکزی حکومت کی غلط پالیسیوں کے خلاف مسلسل آواز اٹھاتے ہیں اس لیے انہیں جھوٹے مقدمات میں پھنسانے کی سازش کی جارہی ہے۔گاندھی خاندان نے اس ملک کے لیے قربانیاں دی ہیں اورآجاسی گاندھی خاندان پرمودی حکومت کے ذریعے تفتیش کے نام پر ظلم کیا جارہا ہے۔ اس کے خلاف کانگریس مسلسل آواز اٹھاتی رہے گی۔ یہ باتیں آج یہاں مہاراشٹرپردیش کانگریس کمیٹی کے صدرناناپٹولے نے مرکزی حکومت کے خلاف کانگریس کے ذریعے کی گئی ستیہ گرہ کے موقع پر کہی ہیں۔

کانگریس صدر سونیا گاندھی سے ای ڈی کے ذریعے دوسری بارتفتیش کئے جانے اور مرکزی حکومت کی انتقامی کارروائی کے خلاف ممبئی میں منترالیہ کے سامنے ستیہ گرہ کیا گیا۔ اس ستیہ گرہ میں ریاستی صدر نانا پٹولے کے ساتھ سابق وزیرمحصول بالاصاحب تھورات، سابق وزیر اعلیٰ اشوک چوہان، ممبئی کانگریس کے صدر بھائی جگتاپ، سابق وزیر ورشا گائیکواڑ، اسلم شیخ، ممبئی یوتھ کانگریس کے صدر ذیشان صدیقی، ممبئی کانگریس کے ورکنگ صدر چرنجیت سنگھ سپرا،ایم ایل اے راجیش راٹھوڑ، سابق ایم ایل اے مدھوچوہان، ریاستی کانگریس کے کارگزارصدر نسیم خان، بھائی نگرالے، ریاستی جنرل سکریٹری دیوانند پوار، پرمود مورے، ڈاکٹر راجوواگھمارے، جوجوتھامس، راجن بھوسلے، وی جے این ٹی کے ریاستی صدر مدن جادھو، ترجمان سریش چندر راج ہنس، ڈاکٹر سید ذیشان احمد، نظام الدین راعین، بھرت سنگھ سمیت سیکڑوں کارکنان موجود تھے۔

اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے نانا پٹولے نے کہا کہ ای ڈی، سی بی آئی، انکم ٹیکس جیسی مرکزی تفتیشی ایجنسیاں حکومت کی غلام بن چکی ہیں۔حکومت کے اشارے پر یہ ایجنسیاں اپوزیشن کے خلاف کارروائی کررہی ہیں لیکن کانگریس ایسی کارروائیوں سے ذرا بھی خوفزدہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی حکومت سے مہنگائی، جی ایس ٹی اور اگنی پتھ جیسی غلط پالیسیوں کے خلاف سوال کررہی ہے۔ چونکہ حکومت کے پاس ان سوالوں کا کوئی جواب نہیں ہے، اس لیے وہ اپوزیشن کو خاموش کرنے کے لیے انکوائری کے ذریعے دھمکارہی ہے۔ پٹولے نے کہا کہ نیشنل ہیرالڈ اخبار نے آزادی کی تحریک میں بہت تعاون کیا ہے،اسی اخبار کے فرضی معاملے میں سونیا گاندھی و راہل گاندھی کی تفتیش کی جارہی ہے، جس کے خلاف کانگریس پارٹی نے ریاست بھر میں ضلع اور تعلقہ کی سطح پر ستیہ گرہ کر کے مرکزی حکومت کے خلاف احتجاج کیا ہے۔

اس موقع پر سابق وزیر محصول بالا صاحب تھورات نے کہا کہ سونیا گاندھی ایثاروقربانی اور جدوجہد کی علامت ہیں۔ وہ ملک کے غریبوں، عام مظلوموں ومحروموں کی آواز ہیں۔ وہ مرکزی حکومت کے اس ظلم کے آگے کبھی نہیں جھکیں گی۔ ہم جیسے کروڑں کارکن ان کے ساتھ نہایت مضبوطی کے ساتھ کھڑے ہیں۔سابق وزیر اعلی اشوک چوہان نے اس موقع پر کہا کہ کانگریس پارٹی مہنگائی اور بے روزگاری جیسے عام لوگوں کے مسائل کے حل کے لیے آواز اٹھارہی ہے۔ پارلیمنٹ میں اور پارلیمنٹ کے باہر کانگریس پارٹی بی جے پی حکومت سے جواب مانگ رہی ہے، اس لیے ای ڈی جیسی ایجنسیوں کے ذریعے دباؤ ڈال کر اپوزیشن کو ختم کرنے کا کام کیا جا رہا ہے۔ جمہوریت میں اپوزیشن کو اس طرح ہراساں کرنا جمہوریت کے لیے مہلک ہے۔ حکومت کے خلاف آواز اٹھانا جمہوری روایت کا حصہ ہے لیکن بی جے پی حکومت اپوزیشن کی آواز کو دبانے کا کام کر رہی ہے۔

ممبئی میں پرامن ستیہ گرہ کرتے ہوئے کانگریس لیڈروں اور کارکنوں کو پولیس نے گرفتار کیا اور بعد میں رہا کر دیا۔ دہلی میں ممبرپارلیمنٹ راہل گاندھی سمیت کئی ممبرانِ پارلیمنٹ، لیڈران وعہدیداران اور کارکنوں کو گرفتار کرتے ہوئے ستیہ گرہ کو توڑنے کی کوشش کی۔پونے میں ریاستی نائب صدر موہن جوشی،ایم ایل اے الہاس پوار، سابق وزیر رمیش باگوے، اروند شندے کے ساتھ کانگریس کے کارکنان نے ستیہ گرہ کیا۔ جبکہ ناگپور میں سابق مرکزی وزیر ولاس متیموار، ایم ایل اے وکاس ٹھاکرے، ایم ایل اے ابھیجت ونجاری، سوشل میڈیا سیل کے وشال متیموار سمیت کارکنوں نے شرکت کی۔ ریاست کے دیگر شہروں میں بھی ستیہ گرہ کیا گیا۔