ہماری بھارت جوڑو یاترا نفرت، تشدد اور خوف کے خلاف ہے: راہول گاندھی

13

مہاراشٹر کی طرح مدھیہ پردیش میں بھی زبردست پذیرائی ملے گی: نانا پٹولے

مہاتما گاندھی نے آزادی سے قبل جو کیا، وہی راہول گاندھی آج کر رہے ہیں: بالا صاحب تھورات

مہاراشٹر میں زبردست کامیابی کے بعد مدھیہ پردیش میں بھارت جوڑو یاترا کا شاندار استقبال کیا

بورڈیلی(ضلع برہان پور):کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے مہاراشٹر میں بھارت جوڑو یاترا کی بہتر منصوبہ بندی کے لیے ریاستی کانگریس کوA+ نمبر دیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس یاترا کو مہاراشٹر کے عوام کی طرف سے بھرپور حمایت حاصل ہوئی ہے۔ 14 دنوں کی اس یاترادوران مجھے مہاراشٹر میں بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملا۔ اب ہم مدھیہ پردیش میں 370 کلومیٹرکی یاترا کریں گے اور اس کے بعد اپنا سفر مزید جاری رکھتے ہوئے سری نگر میں ترنگا لہرائیں گے۔ ہماری یہ بھارت جوڑو یاترا ملک میں پھیلی نفرت، تشدد اور خوف کے خلاف ہے۔ راہل گاندھی نے بدھ کو اپنے مہاراشٹر کے دورے کے اختتام پر یہ بات کہی۔

بھارت جوڑو یاترا بدھ کو مہاراشٹر سے مدھیہ پردیش میں داخل ہوئی۔ اس وقت بورڈیلی، ضلع برہانپور میں ایک باوقار تقریب کے دوران مہاراشٹر پردیش کانگریس کے صدر نانا پٹولے نے مدھیہ پردیش کانگریس کے صدر کمل ناتھ کوترنگا سونپا۔ اس موقع پر ہزاروں کی تعداد میں لوگ موجود تھے۔اس موقع پرخطاب کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا کہ بی جے پی حکومت عوام میں خوف پیدا کر رہی ہے۔ کسانوں کو زرعی پیداوار کی صحیح قیمت نہیں مل رہی۔ ساتھ ہی فصل بیمہ معاوضہ طلب کرنے پر کسانوں کو ڈرایا دھمکایا جا رہا ہے۔ مزدوروں کو منریگا کا کام نہ دے کر ان میں خوف پیدا کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں، مزدوروں اور خواتین کے ذہنوں سے یہ خوف دور کیا جانا چاہئے۔ راہل نے کہا کہ یہ یدیاترا عوام کو اسی خوف سے آزاد کرنے کے لیے کیا جا رہا ہے۔اسی پروگرام کے دوران راہل گاندھی نے رودرا نامی ایک بچے کو اپنے پاس بلاکر اس سے پوچھا کہ وہ بڑا ہوکر کیا بننا چاہتا ہے۔ اس بچے نے جواب دیا کہ وہ ڈاکر بننا چاہتا ہے۔ اس پرراہل گاندھی نے کہا کہ یہ پانچ سالہ رودر ڈاکٹر بننا چاہتا ہے۔ اس کے لیے اس نے خواب دیکھا ہے۔ ڈاکٹر بننے کے لیے یہ سخت محنت کرے گا، لیکن آج کے ہندوستان میں رودر کا خواب پورا نہیں ہوگا کیونکہ میں نے رودر جیسے کئی بچوں کا درد سنا ہے۔ تعلیمی ادارے پرائیویٹ ہو چکے ہیں۔ پڑھائی پر لاکھوں روپے خرچ کرنے پڑتے ہیں لیکن یہ سب کرنے کے باوجود نوجوان ڈاکٹر نہیں بن پاتے۔ اسے روزی کمانے کے لیے کچھ اور کرنا پڑتا ہے۔ملک کی پوری مشینری چار پانچ صنعت کاروں کے ہاتھوں میں ہے۔ ہم سب کو مل کر اس ناانصافی کو روکنا ہوگا۔راہل گاندھی نے کہا کہ جب یو پی اے حکومت تھی تب گیس سلنڈر 400 روپے کا تھا، آج 1200 روپے کا ہے۔ پیٹرول 60 روپے فی لیٹر تھا جو اب 107 روپے فی لیٹر ہو گیا ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ یہ سارا پیسہ کس کی جیب میں جا رہا ہے؟راہل نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ ہم ’من کی بات‘ کی بات نہیں کرتے، بلکہ ہم لوگوں کے ’من کی بات‘ سنتے ہیں۔

اس موقع پر مہاراشٹر پردیش کانگریس کے صدر نانا پٹولے نے کہا کہ بھارت جوڑو یاترا 6 ریاستوں سے گزرکر اب مدھیہ پردیش میں داخل ہو چکی ہے۔ انہوں نے یقین ظاہر کیا کہ یہ یاترا مہاراشٹر کی طرح مدھیہ پردیش میں بھی بہت کامیاب ہوگی۔ پٹولے نے کہا کہ مدھیہ پردیش میں بھی اس یاترا میں شامل لوگوں کو عام لوگوں کی طرف سے بھرپور پیار اور تعاون ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ یاترا کو مہاراشٹر میں زبردست عوامی حمایت حاصل ہوئی۔ یاترا میں مختلف طبقات کے لوگوں نے شرکت کی۔ راہل گاندھی نے بہترین منصوبہ کے لیے مہاراشٹرا کی تعریف کی ہے۔کانگریس لیجسلیچر پارٹی کے لیڈر بالاصاحب تھورات نے کہا کہ کنیا کماری سے اس یاترا کی شروعات کے بعد سے ہر ریاست میں اسے عوام کی طرف سے زبردست تعاون مل رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مدھیہ پردیش میں بھارت جوڑو یاترا کی خوب پذیرائی ہوئی ہے۔ تھورات نے کہا کہ اس دورے کا مقصد ہندوستان میں تنوع کے ذریعے اتحاد پیدا کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہاتما گاندھی نے جو آزادی سے پہلے کیا تھا، راہل گاندھی وہی آج کر رہے ہیں۔ مجھے یقین ہے کہ جب بھارت جوڑو یاترا سری نگر پہنچے گی تو پورا ملک متحد ہو چکا ہو گا۔