Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

مختلف مذاہب کی بااثر شخصیات اور مذہبی رہنماؤں سے اقلیتی امور کے وزیر نواب ملک و وزیرصحت راجیش ٹوپے کا تبادلہ خیال

IMG_20190630_195052.JPG

ممبئی :کورونا کے روک تھام کے لیے کیے جانے والے اقدامات پر آج اقلیتی امور کے وزیر اور وزیرصحت راجیش ٹوپے نے مختلف مذاہب کے بااثر لوگوںاور مذہبی رہنماؤں سے یونیسیف کے تعاون سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے تبادلہ خیال کیااور اپیل کی کہ کورونا کے تعلق سے عوام پائے جانے والے خوف وہراس وغلط فہمی کو دور کرنے کرنے میں پہل کریں۔

ان لیڈران نے ویڈیو کانفرنسنگ کے دوران کہا کہ عوام میں کورونا کے تعلق سے غلط فہمی پائی جارہی ہے جس کی وجہ سے کورونا سے متاثر ہونے والے بیشتر مریض آخری مرحلے میں علاج کے لیے رجوع ہوتے ہیں۔ اس غلط فہمی کو دور کرنا بہت ضروری ہے اس کے لیے مذہبی ادارے وتنظیمیوں کو پہل کرنی چاہیے۔ اس موقع پر اس تبادلہ خیال میں موجودتمام شرکاءنے یہ یقین دلایا کہ وہ ریاستی حکومت کی جانب سے کورونا کے روک تھام کے لیے کی جانے والی کوششوں میں حکومت کے ساتھ ہیں۔

راجیس ٹوپے نے کہا کہ لوگوں کے ذہنوں میں کورونا کے بارے میں خوف اور غلط فہمیاں پائی جاتی ہیں۔ یہ دیکھا گیا ہے کہ بہت سے لوگ اب بھی علاج کے لئے آگے نہیں آتے ہیں جبکہ بہت سے لوگ علامات کو چھپا تے ہیں۔ ایسے وقت میں اگرمتاثرہ شخص آخری لمحے میں اسپتال میں داخل ہوتا ہے تو اس کا علاج مشکل ہوجاتا ہے۔ لہذا لوگوں کو کورونا سے متعلق اپنے ذہنوں میں موجود خوف کو دور کرکے تفتیش کے لئے آگے آنا چاہئے۔ راجیش ٹوپے نے مذہبی رہنماوں اور تنظیموں سے لوگوں کو اس بارے میں آگاہی فراہم کرنے کی اپیل کی۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ عوام تک یہ بات پہونچائی جائے کہ ریاست میں کورونا کے 100 مریضوں میں سے 97 مریض صحت یاب ہو کر گھر جارہے ہیں۔

اس موقع پر اقلیتی امور کے وزیر نواب ملک نے یونیسیف کے اقدام کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں میں ابھی بھی کرونا کے بارے میں خوف اور غلط فہمی موجود ہے۔ بہت سے لوگ علامات ظاہرہونے کے بعد بھی علاج کے لئے آگے نہیں آتے ہیں۔ نواب ملک نے مذہبی اداروں اور مذہبی رہنماوں سے اپیل کی کہ وہ لوگوں کے ذہنوں میں موجود اس طرح کے خوف اور غلط فہمیوں کو دور کرنے کے لئے پہل کریں۔محکمہ اسکیل ڈیولپمنٹ نے ریاست کے بہت سے نوجوانوں کو مختلف قسم کی مہارت کی تربیت دی ہے۔ نواب ملک نے یہ بھی کہا کہ یہ محکمہ مستقبل میں ان طلبا کو روزگار فراہم کرنے کے لئے سخت محنت کرے گا۔نواب ملک نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ تمام مذاہب کے لوگ مل کر کورونا سے لڑیں گے اور اس بحران پر جلد قابو پالیں گے۔

اس ویڈیو کانفرنس میں موجودمذہبی رہنماؤں اوردیگرلیڈران نے اس موقع پر اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ کورونا سے مقابلہ کرنے میں ریاستی حکومت کے ساتھ ہیں۔ اس ویڈیو کانفرنس میں ریاست کے مختلف مذاہب کے معززین نے شرکت کی جن میں نمرمونی مہاراج، آچاریہ دیوانندگرودیو، مولانا محمود دریابادی، مولانا حافظ سیداطہر علی، آرٹ آف لیونگ کے درشک ہاتھی، انجمن اسلام کے صدر ڈاکٹر ظہیر قاضی ، برہمکماری کملیش، بھنتے شانتی رام، بشپ آلوین ڈیسلوا، ایشا فاؤنڈیشن کی کلپنا منیار، ایسکان کے گوکولیشور داس، جماعت اسلامی ہند کے ڈاکٹر سلیم خان، جمعیة علماءمہاراشٹر کے صدر مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی، رام کرشن مشن کے سوامی دیوکاتیانند، یونائیٹیڈ سکھ سبھا فاؤنڈیشن کے رام سنگھ راٹھوڑ وغیرہ نے شرکت کی۔