دیگلور میں تاریخی بھارت جوڑو یاترا کا مہاراشٹر کی روایت کے مطابق زبردست استقبال

885
  • بھارت جوڑو یاترا کے ذریعے میں مہاراشٹر کے لوگوں کا دکھ سمجھنے کے لیے آیا ہوں: راہل گاندھی

  • کنیاکماری سے کشمیر تک کی پدیاترا کو کوئی بھی طاقت نہیں روک سکتی

ناندیڑ، دیگلور: کنیا کماری سے کشمیر تک جاری بھارت جوڑو یاترا کا مقصد ملک کوجوڑنا ہے۔ ملک میں فی الوقت نفرت پھیلاکر ملک کو توڑا جارہا ہے، اس توڑنے کے خلاف یہ بھارت جوڑو یاترا ہے۔ اس پدیاترا کو کشمیر تک کوئی بھی نہیں روک سکتا۔ اس پدیاترا کے دوران آئندہ 14؍دنوں تک مہاراشٹر کے لوگوں کا دکھ سمجھنے کے لیے میں آیا ہوں۔ یہ باتیں ممبرپارلیمنٹ راہل گاندھی نے کہیں۔

ہزاروں مشعلیں ہاتھوں میں لے کر بھارت یاتری راہل گاندھی کے ساتھ پیر کی رات تلنگانہ سے مہاراشٹر کے ناندیڑ ضلع کے دیگلور میں داخل ہوئے۔ تلنگانہ پردیش کانگریس کے صدر ریونت ریڈی نے جیسے ہی پدا یاترا تلنگانہ سے مہاراشٹر پہنچی کانگریس کے ریاستی صدر نانا پٹولے کو ترنگا جھنڈا سونپ دیا۔ اس موقع پر راہل گاندھی کا روایتی مراٹھا انداز میں زبردست استقبال کیا گیا۔

راہل جی گاندھی نے دیگلور میں جمع ہزاروں لوگوں کے ہجوم سے خطاب کیا۔انہوں نے کہا کہ یہ فخر کی بات ہے کہ ہم چھترپتی شیواجی مہاراج کوخراجِ عقیدت پیش کرکے مہاراشٹر میں پد یاترا کا آغاز کررہے ہیں۔ آج ملک کئی سلگتے مسائل میں گھرا ہوا ہے لیکن مرکزی حکومت ان پر توجہ نہیں دے رہی ہے۔ یہ حکومت صرف چار پانچ سرمایہ داروں کے لیے کام کر رہی ہے۔ نوٹ بندی نے ملک میں چھوٹے کاروبار کو ٹھپ کر کے رکھ دیا۔ 400 روپے کا گیس سلنڈر 1100 روپے ہوگیا اورپیٹرول و ڈیزل 100 روپے فی لیٹر ہو گیا ہے لیکن وزیر اعظم نریندر مودی اس پر ایک لفظ بھی نہیں بول رہے ہیں۔

This slideshow requires JavaScript.

دیگلور میں ہونے والے اس استقبالیہ پروگرام میں مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلیٰ و راجیہ سبھا ممبر دگ وجے سنگھ، آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے میڈیا ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ جے رام رمیش، آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے جنرل سکریٹری اویناش پانڈے،مہاراشٹر کانگریس کے انچارج ایچ کے پاٹل، ریاستی صدر نانا پٹولے، لیجسلیچر لیڈر اور مہاراشٹرمیں ا بھارت جوڑو یاترا کے کوآرڈینیٹر بالاصاحب تھورات، سابق وزیر اعلیٰ اشوک چوہان، سشیل کمار شندے، پرتھوی راج چوہان، سابق ریاستی صدر مانیک راؤ ٹھاکرے، سابق وزیر سنیل کیدار، سابق ریاستی وزیر بنٹی پاٹل، ڈاکٹر وشواجیت کدم، ممبئی کانگریس کے صدر بھائی جگتاپ، قبائلی شعبے کے صدر شیواجی راؤ موگھے، ریاستی ورکنگ صدر نسیم خان، پرنیتی شندے،ایم پی رجنی پاٹل، کمار کیتکر، سابق ایم پی حسین دلوائی،سابق ایم پی سنجے نروپم، شیوسینا کے سابق ایم پی سبھاش وانکھیڑے،ایم ایل اے امر راجورکر، ایم ایل اے وجاہت مرزا، ریاستی چیف ترجمان اتل لونڈھے، ڈاکٹر راجو واگھمارے، ریاستی جنرل سکریٹری پرمود مورے، دیوانند پوار، سچن ساونت،ممبئی یوتھ کانگریس کے صدرذیشان صدیقی، نائب صدر موہن جوشی، آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے سکریٹری اور شریک انچارج سمپت کمار، آشیش دووا، ممبئی کانگریس کے کارگزار صدر چرنجیت سنگھ سپرا، سوشل میڈیا کے صدر وشال متیموار، یوتھ کانگریس کے سابق ریاستی صدر ستیہ جیت تانمبے وغیرہ موجود تھے۔

ر

اہول گاندھی نے مہاراشٹر کی عظیم شخصیات چھترپتی شیواجی مہاراج، مہاتما بسویشور، مہاتما جیوتی با پھولے،ڈاکٹر باباصاحب امبیڈکر، اہلیہ دیوی ہولکر، انابھاؤ ساٹھے کے مجسموں کو پھولوں چڑھا کر سلامی دی۔تلنگانہ میں کامیریڈی سے آئے اس پدیاترا کا دیگلور میں زبردست جلوس کی شکل میں استقبال کیا گیا۔ ناندیڑ واطراف کے تمام راستوں سے لوگ راہل گاندھی کے استقبال کے لیے جاتے ہوئے نظر آئے۔دیگلورمیں راہول گاندھی گرودوارہ یادگار صاحبزادے بابا جوراورسنگھ جی بابا فتح سنگھ جی ونالی کی جانب پیدل روانہ ہوئے۔ اس موقع پر تقریبا چارہزار مشعلوں کے ساتھ ہزاروں بھارت یاتری ونالی تک گئے۔یہ یاترا آج دیگلور میں ٹھہرے گی۔