پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں ہونے والے جابرانہ اضافے کو واپس لیاجائے

وگرنہ مستقبل میں اس سے بھی زیادہ وسیع پیمانے پر احتجاج کیا جائے گا: ناناپٹولے

ریاستی کانگریس کی جانب سے ریاست کے ایک ہزار پٹرول پمپوں پر یہ بہ یک وقت زبردست احتجاج

ممبئی:مرکز کی نریندر مودی حکومت پرپٹرول وڈیزل پر بھاری ٹیکس عائد کرکے عوام کی جیبیں کاٹنے کا الزام عائد کرتے ہوئے ریاستی کانگریس نے آج ریاست گیر احتجاج کرتے ہوئے مرکزی حکومت سے فوری طور پر ایندھن کی قیمتوں میں اس جابرانہ وظالمانہ اضافے کو واپس لینے کا مطالبہ کیا اور دیگر صورت میں اس سے بھی بڑے احتجاج کا انتباہ دیا ہے۔ واضح رہے کہ ریاستی کانگریس کی جانب سے ریاست بھر میں بہ یک وقت ایک ہزار سے زائد پٹرول پمپوں پر احتجاج کیا گیا جبکہ کچھ مقامات پر احتجاج کرنے والوں کو پولیس نے گرفتار ورہا بھی کیا۔

ریاستی کانگریس کے صدر ناناپٹولے اوربازآبادکاری کے وزیر وجے ویڈیٹی وار نے گڈچرولی ضلع میں وڈسا میں پٹرول پمپ پر احتجاج کیا۔ اس موقع پر ریاستی کانگریس کے کارگزار صدر چندرکانت ہنڈورے، ایم ایل اے ابھیجت ونجاری، ریاستی ترجمان اتل لونڈھے، ریاستی سکریٹری روندر دریکر، راجا تڈکے، ضلع صدر ڈاکٹر نامدیو اسینڈی وغیرہ موجود تھے۔ احتجاج کے دوران میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے نانا پٹولے نے کہا کہ کورونا نے پچھلے ڈیڑھ سال سے لوگوں کی آمدنی کم کردی ہے، صنعتیں بند ہوچکی ہیں، لاکھوں افراد روزگار سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، لوگ ایندھن کی بڑھتی قیمتوں کی وجہ سے مشکل حالات میں زندگی گزار رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یو پی اے حکومت کے دوران، ڈاکٹر منموہن سنگھ مہنگائی سے عوام کو محفوظ رکھنے کے لیے ایندھن کی قیمتیں مستحکم رکھتے ہوئے عوام کو راحت دی۔ لیکن بین الاقوامی بازار میں خام تیل کی قیمتوں میں بھاری کمی کے باوجود مودی سرکارایندھن کی قیمتوں میں اضافہ کرکے عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈال رہی ہے۔

اس ریاست گیر احتجاج میں تھانے میں کانگریس کے ریاستی کارگزار صدر نسیم خان کی قیادت میں احتجاج ہوا جبکہ کولہاپور میں ریاستی وزیرداخلہ ستیج پاٹل کی قیادت میں احتجاج کیا گیا۔ پونے کے تمام اسمبلی حلقوں میں 35پٹرول پمپوں کے سامنے کانگریس کے لیڈران وکارکنان نے احتجاج کیا۔کسبا اسمبلی حلقے میں کلکرنی پٹرول پمپ کے سامنے سابق ایم ایل اے موہن جوشی کی قیادت میں احتجاج ہوا، چندرپور میں ممبرپارلیمنٹ بالودھانورکر کی قیادت میں زبردست احتجاج ہوا۔ جبکہ ناسک، سانگلی، احمد نگر، ناندیڑ، مالون، امراؤتی، ساونت واڑی، کنکولی، بلڈانہ، اورنگ آباد سمیت ریاست کے بیشتر مقامات پر احتجاج کیا گیا۔ریاست کے ایک ہزار پٹرول پمپوں پر کانگریس کارکنوں نے ایندھن کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف بیک وقت احتجاج کیا۔ اس موقع پر مودی سرکار کے جابرانہ قیمتوں میں اضافے کے خلاف جم کر نعرے بازی کی گئی۔