سونیا و راہل گاندھی کو جھوٹے مقدمات میں پھنسانے کی بی جے پی حکومت کی کوشش: ایچ کے پاٹل

جمہوریت وآئین کے تحفظ کے لیے کانگریس کی ’بھارت جوڑو‘ مہم: ناناپٹولے

مہنگائی سے توجہ ہٹانے کے لیے بی جے پی کی مذہبی سیاست: بالاصاحب تھورات

شرڈی میں کانگریس کی نوسنکلپ ورکشاپ کے اختتامی جلسہٴ عام سے خطاب

ممبئی/ شرڈی:مرکز کی جابر وآمر بی جے پی حکومت اپوزیشن کو ختم کرنے کر رہی ہے۔ مرکزی ایجنسیوں کا استعمال کرتے ہوئے مخالفین کو خوفزدہ کیا جارہا ہے ۔اودئے پور سنکلپ شیویر کی وجہ سے کانگریس کو نیا حوصلہ ملا ہے جس سے بی جے پی ڈری ہوئی ہے۔ اسی لیے ای ڈی نے سونیا گاندھی اور راہل گاندھی کو جھوٹے مقدمات میں پھنسانے کے لیے نوٹس روانہ کیا ہے، لیکن کانگریس پارٹی اس طرح کے جبر کوکبھی لائق اعتنانہیں سمجھتی ۔ یہ باتیں آج یہاں ریاستی کانگریس کے انچارج ایچ کے پاٹل نے کہی ہیں۔وہ مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے زیر اہتمام شردی میں منعقدہ نوسنکلپ ورکشاپ کے اختتام کے موقع پر جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے۔

اس جلسہٴ عام میں ریاستی کانگریس کے صدر ناناپٹولے، قانون ساز پارٹی کے لیڈر اور وزیرمحصول بالاصاحب تھورات، وزیر تعمیرات اشوک چوہان، آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے سکریٹری اورنائب انچارج آشیش دووا، سمپت کمار، سونل پٹیل، ریاستی ورکنگ صدر چندرکانت ہنڈورے، ریاستی نائب صدر موہن جوشی، ریاستی جنرل سکریٹری پرمود مورے، دیوآنند پوار، چیف ترجمان اتل لونڈھے، ایم ایل اے ڈاکٹر سدھیر تامبے، ایم ایل اے لہو کانڈے، ایم ایل اے ہیرامن کھوسکر، ایم ایل اے شریش چودھری، ضلع صدر بالا صاحب سالونکے، یوتھ کانگریس کے سابق ریاستی صدر ستیہ جیت تامبے، مہانند کے صدر رنجیت سنگھ دیشمکھ، لاتور کے ابھے سالونکے، ڈاکٹر ایکناتھ گوندکر، سچن چوگلے، راجا رام پانگہوانے ، ڈاکٹر تشار شیوالے اور محترمہ درگاتائی تامبے سمیت احمد نگر، ناسک ضلع کے کانگریس کے عہدیداران وکارکنان بڑی تعداد میں موجود تھے۔

اس جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے ریاستی صدر نانا پٹولے نے کہا کہ ہندوستان کو کانگریس کے نظریات کی وجہ سے آزادی ملی۔ جس ملک میں سوئی نہیں بنتی تھی وہاں راکٹ بننے لگی۔ کانگریس نے ہندوستان کو سپر پاور بنایا، لیکن مذہب کی تجارت کرنے والی بی جے پی منافرت پیدا کرکے ملک کی یہ حیثیت ختم کررہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت روزآنہ ملک کے اثاثے کو دوصنعتکاروں کو فروخت کررہی ہے۔ بین الاقوامی سطح پر ملک کوحاصل ہوئے وقار کو مودی حکومت مٹی میں ملارہی ہے۔پٹولے نے کہا کہ مرکزی حکومت مسلسل جھوٹ بول کرہر روز ملک کے مختلف سرکاری کمپنیوں کو بیچ رہی ہے۔انہںوں نے کہا کہ ملک میں صرف دو سرمایہ دار ہی ترقی کررہے ہیں۔ مرکز کی بی جے پی حکومت نے بین الاقوامی سطح پر ہندوستان کی شبیہ کو خراب کرنے کا کام کیا ہے اور کانگریس نے ملک کی جمہوریت اور آئین کو بچانے کے لیے بھارت جوڑو مہم شروع کیا ہے۔

اس موقع پر وزیر محصول بالاصاحب تھورات نے کہا کہ ملک میں مہنگائی میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ پٹرول، ڈیزل وگیس کی قیمتیں آسمان چھورہی ہیں۔ملک میں بے روزگاری ایک بہت بڑا مسئلہ بن چکا ہے۔ بی جے پی ان بنیادی مسائل کو نظر انداز کرنے کے لیے ذات پات اور مذہب کی سیاست کر رہی ہے۔ روزآنہ نت نئے موضوعات پیداکرکےعوام کوان میں الجھایا جارہاہے ،لیکن کانگریس ان سب کا جواب اپنے ’بھارت جوڑو مہم‘ کے ذریعے دے گی۔ تھورات نے کہاکہ اندراگاندھی کی لاش کو اپنی گود میں اٹھانے والی سونیاگاندھی جب ان کے شوہر کے جسم کے ٹکڑے ہوئے تو انہوں نے ملک کو سنبھالا، ملک کے لیے قربانیاں دیں ، ایسی شخصیت اوراس کے اہلِ خانہ کو آج بی جے پی حکومت پریشان کررہی ہے۔ لیکن ملک کی عوام بی جے پی کو اس کا جواب دیئے بغیر نہیں رہے گی۔

تعمیرات عامہ کے وزیر اشوک چوہان نے کہا کہ اب یہ خدشہ پیدا ہوگیا ہے کہ مہاتما گاندھی، پنڈت جواہر لال نہرو، ڈاکٹرباباصاحب امبیڈکرکے نظریات کہیں ختم تو نہیں ہوجائیں گے۔ مرکزی حکومت ہرمحاذ پر مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے اور وہ اس ناکامی کو چھپانے کے لیے وہ مذہبی معاملے میں لوگوں کو الجھارہی ہے ۔گیان واپی، ہنومان چالیسہ جیسے مسائل سے زیادہ بے روزگاری کا مسئلہ اہم ہے۔ انہوں نے ای وی ایم کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ای وی ایم نہیں چاہیے، ہمیں بیلیٹ باکس کا سسٹم چاہئے۔ انہوں نے اس یقین کا بھی اظہار کیا کہ بھارت جوڑو ابھیان سے کانگریس مزید مضبوط ہوگی۔