پٹرول وڈیژل کی قیمتیں کم کرتے ہوئے عوام کوراحت دی جائے

ریاستی کانگریس کے کارگزار صدر نسیم خان کا وزیراعلیٰ کو مکتوب

ممبئی: مرکز کی بی جے پی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے آج مہنگائی آسمان چھو رہی ہے اور عام آدمی کا جینا محال ہو گیا ہے۔ پٹرول، ڈیزل و گیس کی قیمتیں عام آدمی کی پہونچ سے باہر ہوگئی ہیں۔ پنجاب وراجستھان کی حکومتوں نے پٹرول وڈیژل کی قیمتوں میں کمی کرکے جس طرح عوام کو راحت دی ہے اسی طرح ریاست کو عوام کو بھی پٹرول وڈیژل کے ٹیکس میں کمی کرتے ہوئے راحت دی جائے۔ یہ مطالبہ آج یہاں سابق وزیر اور مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے کارگزار صدر عارف نسیم خان نے وزیراعلی سے ایک مکتوب کے ذریعے کیا ہے۔

وزیر اعلیٰ کو لکھے گئے خط میں نسیم خان نے کہا کہ مرکزی حکومت نے گزشتہ سات سالوں میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں 100 روپے فی لیٹر تک اضافہ کیا ہے۔ ایل پی جی گیس سیلنڈربھی 900 روپے سے اوپر پہنچ گیا ہے۔ مودی حکومت کی جانب سے مہنگائی میں مسلسل اضافہ سے عام لوگ پریشان ہیں۔ پٹرول ڈیزل کی مہنگائی سے آمدورفت بھی مہنگا ہوگیا ہے جس کی وجہ سے ضروری اشیاء کی قیمتیں بڑھ گئی ہیں۔ کورونا نے پہلے ہی لوگوں کی آمدنی کو متاثر کرتے ہوئے ان کے سامنے کئی مسائل پیداکردیئے تھے۔ مشکلات کی اس چکی میں عوام پس رہی ہے اور ان کا جینا مشکل ہورہا ہے۔

نسیم خان نے اپنے مکتوب میں مزید کہا ہے کہ پٹرول وڈیژل پر لاگوکئے جانے والے ٹیکس سے ریاستوں کو ملنے والا پیسہ مرکزی حکومت وقت پر نہیں دیتی ہے جبکہ سیس کی صورت میں ملنے والے پیسوں میں سے ریاستوں کو ان کا حصہ تک نہیں دیا جاتا ہے۔ وہ صرف مرکزی حکومت کو ہی ملتا ہے۔ اس سے ریاستوں کی معاشی مشکلات میں اضافہ ہورہا ہے لیکن اسی کے ساتھ ریاست کی عوام کو ریلیف فراہم کرنا بھی ہمارا فرض ہے۔ ریاست کی عوام کے فائدے کے لیے مہاوکاس اگھاڑی حکومت کے سربراہ کے طور پر آپ پٹرول وڈیژل کی قیمتوں میں کم کرتے ہوئے عوام کو راحت دیں۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔