Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

MPCC Urdu News 15 Sep 2020

پیاز کی برآمدات پر پابندی غیرمنصفانہ، فوراً ہٹائی جائے: بالاصاحب تھورات

مرکزکی مودی حکومت کی لقوہ زدہ پالیسی کے خلاف کانگریس کی ریاست گیر تحریک

ممبئی: دنیا بھر میں لاک ڈاؤن ہونے کے باوجود کھیتوں میں دن رات محنت کرکے کسانوں نے پیازکی پیداوار کی۔ اب ذرا اس کی بہتر قیمتیں ملنے کی امید پیدا ہورہی تھی اورکسان خوش تھے کہ ان کے ہاتھوں میں کچھ پیسے آئیں گے کہ مرکزی کی بے سمت مودی حکومت نے اچانک پیاز کی برآمدات پر پابندی عائد کرکے کسانوں کے ساتھ سخت ظلم کیا ہے۔ مرکزی حکومت کا یہ فیصلہ سراسر ناانصافی پر مبنی ہے۔ پیاز کی برآمدات پر یہ پابندی فوری طور پر واپس لیے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے مرکزی حکومت کی غیرمنصفانہ فیصلے کے خلاف کانگریس پارٹی کل(آج) ریاست گیر احتجاج کرے گی۔ یہ اطلاع آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ووزیرمحصول بالاصاحب تھورات نے دی ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ تین ماہ قبل یعنی کہ 4جون 2020کو مرکزی وزیرپرکاش جاوڈیکر نے پیاز، آلوودالوں کو زندگی کی بنیادی اشیاء کی فہرست سے خارج کرکے خود اپنے ہاتھوں اپنی پیٹھ تھپتھپائی تھی۔ سوال یہ پپدا ہوتا ہے کہ پھر تین مہینے میں ہی مرکزی حکومت نے اپنا یہ فیصلہ کیوں تبدیل کیا؟ سچائی یہ ہے کہ پرکاش جاوڈیکر خود اپنے فیصلے پر عمل درآمد نہیں کرسکتے۔ مرکزکی مودی حکومت کی پالیسی لقوہ زدہ ہوچکی ہے، جس کے خلاف ملک بھر کی عوام کو احتجاج کرنا ضروری ہوگیا ہے، وگرنہ ملک مکمل طور پر تباہ ہوجائے گا۔

بالاصاحب تھورات نے کہا کہ وزیراعظم مودی ملک کو’آتم نربھر‘ (خود کفیل) بنانے کی ڈینگیں مارتے ہیں لیکن کسانوں کو تباہی کے دہانے پر پہونچانے والے فیصلے کرتے ہیں۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ اس طرح کے فیصلوں سے کسان بھلا کس طرح آتم نربھر بنیں گے؟ اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ مودی حکومت کا یہ اعلان کہ وہ کسانوں کی آمدنی کو دوگنی کردیں گے، زرعی پیداوار کو ڈیڑھ گنی قیمت دیں گے یا کسانوں کی فلاح وبہبود کے لیے کام کریں گے، محض ایک جملہ تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملک کی جی ڈی پی 24فیصد گرچکی ہے۔ معیشت کے تمام شعبے بری طرح مندی کے شکار ہیں۔ ایسے میں زرعی شعبہ کی کارکردگی میں کچھ حد تک راحت کی خبر تھی۔ لیکن وزیراعظم سے بھلا یہ شعبہ بھی کس طرح محفوظ رہ سکتا تھا، سو انہوں نے فوری طور پر اپنی توجہ اس جانب مبذول کرتے ہوئے پیاز کی برآمدات پر پابندی عائد کرکے اسے بھی تباہی کے دہانے پر پہونچادیا۔ سچائی یہ ہے کہ مودی حکومت کی تمام پالیسیاں لقوہ زدہ ہیں اور اس کے خلاف آواز اٹھانا ہرشہری کی ذمہ داری ہے۔