• 425
    Shares

دوسال گزرنے کے بعد بھی فڈنویس وزیراعلیٰ کے عہدے کے خواب میں ہی جی رہے ہیں: اتل لونڈھے

انہیں خواب سے باہر آکر حقیقی صورت حال کو قبول کرلینا چاہئے

ممبئی:بھارتیہ جنتا پارٹی کے اقتدار سے بے دخل ہوئے دوسال گزرنے کے باوجوددیوندرفڈنویس ابھی تک یہ احساس ہورہا ہے کہ وہ ریاست کے وزیراعلیٰ ہیں۔ فڈنویس ابھی تک یہ قبول نہیں کرسکے ہیں کہ گزشتہ دو سال سے وہ اسمبلی میں حزبِ اختلاف کے لیڈر ہیں۔انہیں اب اس خواب سے باہر آکر حقیقی صورت حال تسلیم کرنی چاہئے۔ یہ باتیں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے جنرل سکریٹری وترجمان اتل لونڈھے نے کہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ فڈنویس نے ایک پروگرام میں کہا ہے کہ مجھے اب بھی لگتا ہے کہ میں ریاست کا وزیر اعلیٰ ہوں۔ان کا یہ بیان اس بات کا ثبوت ہے کہ اقتدار کی ان کی ہوس اورنشہ ابھی تک نہیں اترا ہے۔ اقتدار ہاتھ سے پھلستا نظرآنے پر انہوں نے منھ اندھیرے اپنی چال چلی تھی لیکن بدقسمتی سے ان کی وہ چال ناکام ہوگئی۔ اس کے بعد بھی انہو ں نے آس نہیں چھوڑی اوراعلان کیا کہ میں دوبارہ آؤنگا۔ لیکن اس کے بعد بھی انہیں موقع نہیں ملا۔ پھرانہوں نے جیوتشیوں کی مانند یہ اعلان کرتے رہے کہ مہاوکاس اگھاڑی حکومت آج گرے گی، کل گرے گی، اس تاریخ کو گرے گی، چار دن بعد گرے گی لیکن حکومت گرنی تو دوہ وہ مزید مضبوط ہوتی گئی اور آج بھی ان کی توقع سے زیادہ مضبوط ہے۔ شیخ چلی کی طرح اب بھی خواب دیکھنے میں انہیں شاید زیادہ اچھالگتا ہے۔انہیں اب اس خواب سے باہر آنا چاہئے اوراس حقیقت کو تسلیم کرلینا چاہئے کہ وہ اب وزیراعلیٰ نہیں بلکہ حزبِ اختلاف کے لیڈر ہیں۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔