کسانوں کے احتجاج سے گری ساکھ کو بہتربنانے کی کوشش

0 15

بی جے پی نے پی ایم کے عہدے کاوقار ہی خاک میں ملادیا: ناناپٹولے

وزیراعظم کے قافلے پر سنگ باری کا الزامضحکہ خیز، بی جے پی امیت شاہ کے گھر کے سامنے احتجاج کرے

ممبئی:وزیر اعظم نریندر مودی کا دورہ پنجاب میں سیکورٹی کی خامی کا معاملہ پہلے سے طئے شدہ ایک چال ہے۔ وزیراعظم کا پروگرام اچانک کیوں تبدیل کیا گیا، اس کے پیچھے کیا مقصد تھا؟یہ سوال کرتے ہوئے ریاستی کانگریس کے صدر ناناپٹولے نے کہا ہے کہ پنجاب کے واقعے کے بعد بی جے پی لیڈروں کے بیانات، وزیر اعظم کا یہ بیان کہ ’میں زندہ واپس آیا‘ اور پھر صدر سے ملاقات سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ بی جے پی نے کسانوں کی تحریک سے گری ہوئی ساکھ کو بہتر بنانے کے لیے یہ سب ایک منصوبہ بندی کے تحت کیا ہے،لیکن اپنی اس کوشش میں اس نے نریندرمودی وبی جے پی کے سیاسی فائد ے کے لئے وزیراعظم کے عہدے کے وقار کو خاک میں ملادیا۔

تلک بھون میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے پٹولے نے مزید کہا کہ وزیر اعظم پورے ملک کے وزیراعظم ہیں اور ان کی سلامتی بہت اہم ہے۔ ان کی حفاظت پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہونا چاہیے۔ پنجاب کے وزیر اعلیٰ چنی نے اس معاملے کی پوری وضاحت کردی ہے، لیکن بی جے پی جان بوجھ کراس کو سیاسی رنگ دے کر کانگریس کو بدنام کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔اس واقعہ کو بی جے پی نے ایک ایوینٹ بنادیا ہے۔ وزیر اعظم کی سیکورٹی ایس پی جی کے پاس ہے اور کئی اہم مرکزی ادارے بھی اس میں شامل ہیں۔ گزشتہ روز ہم نے اس سلسلے میں امت شاہ سے وضاحت طلب کی تھی لیکن مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ اور وزارت داخلہ خاموش ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر اعظم نریندر مودی کے قافلے کے قریب جانے والے لوگ بی جے پی کے کارکن تھے جو نریندر مودی زندہ باد کے نعرے لگارہے تھے۔ ایک مرکزی وزیر کا یہ بیان کہ وزیر اعظم کے قافلے پر پتھراؤ کیا گیا، مضحکہ خیز ہے۔ پٹولے نے نارائن رانے کا نام لیے بغیر کہا کہ لوگوں کی بینائی عمر کے ساتھ کم ہوجاتی ہے لیکن ایسا لگتا ہے کہ کچھ لوگوں کی بینائی عمر کے ساتھ بڑھ جاتی ہے۔

مہاراشٹر میں ہم سب سے زیادہ ڈیجیٹل ممبربنائیں گے: ناناپٹولے

کانگریس کی ڈیجیٹل ممبرسازی مہم کی شروعات

ممبئی:آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے ذریعے ڈیجیٹل ممبرشپ رجسٹریشن مہم شروع کی گئی ہے۔ یہ صرف ایک مسڈ کال کے ذریعے ممبررجسٹر کرنے کی مہم نہیں ہے بلکہ یہ ایک انتہائی شفاف اور قابل اعتماد ممبر رجسٹریشن مہم ہے۔ مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر نانا پٹولے نے یقین ظاہر کیا ہے کہ مہاراشٹر اس مہم کو کامیاب بنانے میں بھرپور تعاون کرتے ہوئے ملک میں سب سے زیادہ ممبران کا اندراج کرے گا۔

تلک بھون میں منعقد ڈیجیٹل ممبرسازی مہم کی تقریب ڈیجیٹل ممبرسازی مہم کے سربراہ کے راجو، ممبرپارلیمنٹ جیوتی منی، پروین چکرورتی، وزیربرائے عوامی تعمیرات اشوک چوہان، وزیرتوانائی ڈاکٹرنتن راؤت، ریاستی کانگریس کے کارگزارصدر نسیم خان، بسوراج پاٹل، آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے سکریٹری ومعاون انچارج سونل پٹیل،بی ایم سندیپ، سپمت کمار، ریاستی نائب صدرڈاکٹر سنیل دیشمکھ، موہن جوشی، سنجئے راٹھوڑ، چارولتا ٹوکس، الہاس پوار، مناف حکیم، بی ای نگرالے، سندھیا تائی سوالاکھے، ولاس اوتاڈے، سدھارتھ ہتھی امبیرے، این ایس یو آئی کے صدر عامرشیخ،سوشل میڈیا شعبے کے ریاستی صدر وشال متموار،ممبئی یوتھ کانگریس کے ایم ایل اے ذیشان صدیقی، ریاستی جنرل سکریٹری دیوآنند پوار، جنرل سکریٹری وترجمان ڈاکٹر راجو واگھمارے وغیرہ موجود تھے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے تعمیرات عامہ کے وزیر اشوک چوان نے کہا کہ آنجہانی وزیر اعظم راجیو گاندھی نے ملک میں جدید ٹیکنالوجی کی جو بنیاد رکھی تھی اس کا اگلا قدم ڈیجیٹل ممبرسازی مہم ہے۔ یہ ممبرسازی موبائل کے ذریعے کی جائے گی جو بہت تیز اور انتہائی قابل اعتماد ہوگی۔ڈیجیٹل ممبرسازی مہم کے سربراہ راجو نے کہا کہ ڈیجیٹل ممبرشپ رجسٹریشن مہم بہت اہم ہے اور اس سے پارٹی کی تنظیم کو مضبوط بنانے میں مدد ملے گی۔ ہر بوتھ پر دو رضاکاروں، ایک خاتون اور ایک مرد کے ذریعے گھر گھر جا کر رکنیت کا اندراج ایپ کے ذریعے کیا جائے گا۔ جیسے ہی ممبر رجسٹرڈ ہوگا ممبر کو ایک ایس ایم ایس موصول ہوگا اور ان ممبران کو شناختی کارڈ بھی دیا جائے گا۔ممبرپارلیمنٹ جیوتی منی نے اس موقع پر ڈیجیٹل سبسکرپشن مہم چلانے کے بارے میں تفصیلی معلومات دی۔انہوں نے کہا کہ ایک ممبر کو رجسٹر کرنے میں ایک منٹ سے زیادہ وقت نہیں لگے گا۔یہ سوفیصد قابل اعتماد ممبران رجسٹریشن ہے اورالیکشن کمیشن کے ڈیٹا کے ساتھ اس کی تصدیق کی جائے گی۔پروگرام کی نظامت ریاستی نائب صدر بی ای نگرالے نے کی۔