NCP Urdu News 6 July 22

4

ریاست میں شندے وفڈنویس حکومت بنتے ہی گیس سیلنڈرمیں 50روپئے کا اضافہ: تپاسے

عوام کو خودہی سمجھ لینا چاہئے کہ حکومت کی اس تبدیلی کے کیا معنی ہیں

ممبئی: ایک طرف مہاوکاس اگھاڑی کے 50 ایم ایل اے کوتوڑا گیا تو دوسری جانب مہاراشٹر میں اقتدار میں آتے ہی بی جے پی حکومت نے گھریلو گیس سلنڈر کی قیمت میں 50 روپے کا اضافہ کر دیا۔اس سے عوام کو خود ہی سمجھ لینا چاہئے کہ حکومت کی اس تبدیلی کے کیا معنی ہیں۔ یہ باتیں آج یہاں این سی پی کے ریاستی چیف ترجمان مہیش تپاسے نے کہی ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ مہاوکاس اگھاڑی میں شامل شیوسینا کے 50ایم ایل ایزکی بغاوت اور ایکناتھ شندے اور دیویندر فڑنویس کی حکومت آتے ہی مرکزی حکومت نے گھریلو گیس سلنڈر کی قیمت میں 50 روپے کا اضافہ کر دیا ہے۔ ایک جانب 50 باغی ایم ایل اے اوردوسری جانب 50 روپے گیس سلنڈر کی قیمت میں اضافہ کچھ شک پیدا کررہا ہے۔عوام کے ذہنوں میں یہ سوال پیدا ہونے لگا ہے کہ کیا مہاراشٹر میں مہا وکاس اگھاڑی حکومت کا تختہ الٹنے کے لیے باغی ایم ایل اے پرجس ’مہاشکتی‘ کے ذریعے کیے گئے پیسوں کی بارش کی گئی، وہ اخراجات گیس سلینڈر کی قیمت میں اضافے سے وصول کیے جا رہے ہیں؟تپاسے نے یہ بھی کہا کہ وزیراعلیٰ ایکناتھ شندے نے اعلان کیا تھا کہ ہماری حکومت آئے گی تو ہم پٹرول اور ڈیزل پر ٹیکس کم کریں گے، وہیں دوسری طرف بی جے پی کی طرف سے گھریلو گیس سلنڈروں میں اضافہ سے عوام حیران ہیں۔