• 425
    Shares

ممبئی: چھترپتی شیواجی مہاراج ایئرپورٹ کا نام تبدیل کرکے اڈانی ایئرپورٹ کرنا کسی طور مناسب نہیں ہے، یہ اڈانی کی سب سے بڑی غلطی ہے۔ یہ باتیں آج یہاں این سی پی کے قومی ترجمان واقلیتی امور کے وزیر نواب ملک نے کہی ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ جے وی کے ایئرپورٹ سے اڈانی نے تمام مالکانہ حقوق وشیئر خرید لیے جس کے بعد ایئر پورٹ کے مالکانہ حقوق اڈانی کے پاس چلے گئے ہیں۔ لیکن اس کا مطلب یہ ہرگزنہیں ہے کہ چھترپتی شیواجی مہاراج ایئرپورٹ کا تبدیل کرکے اڈانی

ایئرپورٹ کردیا جائے۔ اڈانی کے پاس صرف ایئرپورٹ کے انتظامی امور کا اختیار ہے، نام تبدیل کرنے یا نام رکھنے کا اختیار نہیں ہے۔ نواب ملک نے کہا کہ اڈانی ایئرپورٹ لکھنا کسی طور مناسب نہیں ہے۔ اس سے لوگو ں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں جس کی وجہ سے وہاں پر یہ واقعہ پیش آیا۔ اڈانی کو اس بات کا لحاظ کرنا چاہئے کہ لوگوں کے جذبات مجروح نہ ہوں۔

واضح ہوکہ اڈانی کی جانب سے چھرپتی شیواجی مہاراج ایئرپورٹ کے قریب شیواجی کے مجسمے کے سامنے کی جگہ پر اڈانی ایئرپورٹ لکھا گیا تھا جس کے خلاف شیوسینا نے احتجاج کرتے ہوئے وہ بورڈ نکال دیا۔ اس واقعے سے ایئرپورٹ پر کشیدگی پیدا ہوگئی تھی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔