ڈبّے نہیں بلکہ ملک کو تباہی کی کھائی میں لے جانے والاانجن بدلنا چاہئے: ناناپٹولے

ایندھن ومہنگائی کے خلاف کانگریس کی شعبہ خواتین کا ریاست گیر احتجاج

ممبئی: مودی حکومت گزشتہ ۷ سالوں سے ملک کو تباہی کی کھائی میں پہونچادیا ہے۔ 70سالوں میں کانگریس کی حکومتوں نے ملک کو مختلف پروگرام وپروجیکٹ کے ذریعے مضبوط اورمستحکم بنایا لیکن مودی حکومت نے 70سالوں کا یہ وقار اور شان وشوکت کا محض۷ سالوں میں ہی سودا کردیا ہے۔ نوٹ بندی وجی ایس ٹی سے ملک کا زبردست نقصان کیا۔ مہنگائی، ایندھن کی قیمتوں میں اضافہ، کوکنگ گیس، خوردنی تیل اوردالوں وغیرہ کی مہنگائی نے عام آدمی کی کمر کو توڑ کر رکھ دیا ہے۔ ایسے میں حکومت وزراء تبدیل کررہی ہے، جبکہ ڈبّوں کی تبدیلی سے کچھ نہیں ہونے والا ہے، ملک کو تباہی کی کھائی میں لے جانے والا انجن تبدیل ہونا چاہئے۔ یہ باتیں آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ناناپٹولے نے کہی ہیں۔

پونے میں پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے ناناپٹولے نے کہا کہ مودی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے عام لوگوں کو مہنگائی کا خمیازہ بھگتنا پڑ رہا ہے۔ اس مہنگائی نے عام لوگوں کے ساتھ ہی اوسط طبقے وملازمت پیشہ لوگوں کی زندگی کو بھی دوبھر بنادیا ہے۔ کورونا کی وجہ سے ملک کی معیشت برباد ہوچکی ہے، کروڑوں لوگوں کے روزگار چھن گئے ہیں۔ لوگوں کے پاس پیسے نہیں ہیں اور اس پر مہنگائی نے آسمان کو چھولیا ہے۔اس مہنگائی کے خلاف کانگریس سڑکوں پر اتر کر مودی حکومت کے خلاف احتجاج کررہی ہے۔ 17/تاریخ تک ریاست کے مختلف مقامات پر احتجاج جاری رہیں گے۔ کانگریس کی کوشش ہے کہ عام آدمی کی مہنگائی کے خلاف بلند ہونے والی آواز دہلی کی حکومت تک پہونچائے۔

اس پریس کانفرنس میں وزیرزراعت ڈاکٹر ویشواجیت کدم، ریاستی کانگریس کے نائب صدر موہن جوشی، پونے شہرکانگریس کمیٹی کے صدرووزیر رمیش باگوے، کسان کانگریس کے قومی نائب صدر شیام پانڈے، ریاستی ترجمان اتل لونڈھے وغیرہ موجود تھے۔واضح رہے کہ کانگریس پارٹی کی جانب سے مہنگائی وایندھن کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف ریاست گیر سطح پر 10/روزہ احتجاجی تحریک شروع ہے۔ آج کانگریس کی شعبہئ خواتین نے ریاست بھر میں سڑکوں پر چولہے جلاکر احتجاج کیا۔ ناگپور میں شعبہئ خواتین کی ریاستی صدر سندھیا سوالاکھے کی قیادت میں احتجاج کیا گیا جبکہ امراؤتی میں خواتین واطفال بہبود کی وزیر نیزوزیرنگراں یشومتی ٹھاکور کی قیادت میں احتجاج کیا گیا۔ پونے کے احتجاج میں ریاستی وزیر ویشواجیت کدم بھی شریک ہوئے جبکہ کولہاپور، سانگلی سمیت ریاست بھر میں تمام ضلعی ہیڈکوارٹر پر خواتین کانگریس نے احتجاج کیا۔