ممبئی: امراؤتی شہر کے گوکہ امن وامان قائم ہوچکا ہے مگر بی جے پی کی جانب سے وہاں قصداً ایک فرقہ ورانہ کشیدگی بڑھائی جارہی ہے۔ بی جے پی وہاں پر فسادات کی آگ بھڑکاکر اس پر اپنی سیاسی روٹی سینکنے کی کوشش کررہی ہے۔ کیا بی جے پی گجرات کی طرح مہاراشٹر کو بھی فرقہ وارانہ فسادات کا تجربہ گاہ بنانا چاہتی ہے؟ یہ سوال آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ناناپٹولے نے کیا ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ اقتدار سے محروم ہونے کے بعد بی جے پی کا رویہ ایک اپوزیشن پارٹی کی طرح نہیں بلکہ مہاراشٹر مخالف پارٹی کی مانند ہے۔پٹولے نے کہا کہ ریاست میں ناندیڑ، مالیگاؤں اور امراؤتی میں ہونے والے واقعات تشویشناک ہیں اور ریاستی حکومت نے بروقت حالات پر قابو میں پالیا ہے۔

لیکن بی جے پی کی جانب سے امن وامان کو خراب کرنے اور مذہبی منافرت پھیلانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ بی جے پی کو ایک ذمہ دار اپوزیشن پارٹی کے طور پر مہاراشٹر کوپرامن رکھنے کے لیے پہل کرنی چاہیے تھی، لیکن بی جے پی کے لیڈر اشتعال انگیز بیانات دے کر آگ میں تیل ڈال رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی لیڈروں کے بیانات کو دیکھ کر ایسا لگتا ہے کہ وہ لوگوں کو فسادات کے لیے اکسا رہے ہیں۔سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ وہ اپوزیشن لیڈر ہیں یا مہاراشٹر مخالف پارٹی لیڈر ہیں؟

ناناپٹولے نے کہا کہ گجرات میں بی جے پی نے گودھراسے شروع ہونے والے فسادات کا تجربہ کیا اور پورے ملک میں اس کو پھیلایا۔ اب وہ مہاراشٹر کو فسادات کا تجربہ گاہ بنا کر سیاسی فائدہ حاصل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ اتر پردیش کے انتخابات کا فائدہ اٹھانے کے لیے کچھ لیڈروں نے مہاراشٹر میں آگ لگانے کی کوشش شروع کردی ہے۔ لیکن لیکن مہاراشٹر کی سمجھدارعوام بی جے پی کی ان سازشوں کا شکار نہیں ہوگی۔بی جے پی لیڈروں کو اپنی یہ حرکت چھوڑ کر مہاراشٹر کے امن وامان کو قائم رکھنے کی کوشش کرنی چاہئے۔

قانون ساز کونسل کے ضمنی انتخاب میں کانگریس کی ڈاکٹر پرگیہ ساتو بلامقابلہ منتخب

ممبئی:کانگریس کی امیدوار ڈاکٹر پرگیہ راجیو ساتو قانون ساز کونسل کے ضمنی انتخاب میں بلا مقابلہ منتخب ہو گئیں ہیں۔ مہاوکاس اگھاڑی نے ساتو کی حمایت کی تھی، بی جے پی کے امیدوارکے ذریعے اپنی نامزدگی واپس لینے سے ڈاکٹرپرگیہ ساتوکا بلا مقابلہ انتخاب ہوگیا۔یہ ضمنی انتخاب بلامقابلہ ہونے پر ریاستی کانگریس کے صدر ناناپٹولے، قانون ساز کونسل کے لیڈر ووزیرمحصول بالاصاحب تھورات نے مہاوکاس اگھاڑی میں شامل اتحادی پارٹیوں نیز حزبِ مخالف بی جے پی کا شکریہ ادا کیا ہے۔آج الیکشن کمیشن کے افسران نے ڈاکٹر پرگیہ ساتو کو سرٹیفکٹ دیا۔ اس موقع پر ریاستی صدر ووزیرمحصول کے علاوہ ممبئی کانگریس کے صدر ایم ایل اے بھائی جگتاپ، اسکولی تعلیم کی وزیر ورشاگائیکواڑ موجود تھیں جنہوں نے ڈاکٹرپرگیہ ساتو کو بلامقابلہ منتخب ہونے پر مباکباد پیش کی۔

اب اوبی سی کے ساتھ ناانصافی نہیں ہونے دیں گے: نانا پٹولے

ممبئی:او بی سی برداری کے لوگوں کی تعداد زیادہ ہونے کے باوجود ان کے ساتھ مناسب انصاف نہیں ہوتا ہے۔ آئین نے اس طبقے کو جو حقوق دیئے ہیں وہ انہیں ملنا چاہئے جس کے لئے ہم جدوجہد کریں گے۔ اوبی سی بھائیوں کے حقوق ومطالبات کے مطالبے میں کانگریس پارٹی ہمیشہ ان کے ساتھ رہے گی۔ اب اوبی سی برداری کے ساتھ ناانصافی نہیں ہونے دیں گے۔یہ باتیں آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ناناپٹولے نے ریاستی کانگریس کے اوبی سی شعبے کے عہدیداروں کے تفویضِ عہدہ پر پروگرام میں کہی ہیں۔

تلک بھون میں منعقدہ پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے ناناپٹولے نے مزید کہا کہ او بی سی برادری نے 2014 اور 2019 کے انتخابات میں بی جے پی کوبڑے پیمانے پر ووٹ دے کر اقتدارتک پہنچانے میں مدد کی لیکن بی جے پی نے او بی سی برادری کی فلاح و بہبود کے لیے کچھ نہیں کیا۔اس نے او بی سی برادری کو صرف ووٹوں کے لیے استعمال کیا۔ او بی سی سماج مانگنے والا نہیں ہے لیکن آئین نے انہیں جو حقوق دیئے ہیں وہ انہیں ملنے چاہئیں اور جب تک یہ حقوق نہیں مل جاتے ہم لڑتے رہیں گے۔ یہ لڑائی نہایت جوش وخروش کے ساتھ لڑنی ہوئی۔

پٹولے نے کہا کہ1999میں جب میں ایم ایل اے تھا تو او بی سی اسکالرشپ کے لئے نہایت شدومد سے مطالبہ کیا تھا۔ اس وقت کے وزیراعلیٰ ولاس راؤ دیشمکھ نے اوبی سی براردی کے کے بچوں کو دسویں جماعت تک اسکالرشپ دینے کا فیصلہ کیا تھا۔ انہو ں نے کہا کہ بھانوداس مالی جب سے ریاستی او بی سی شعبہ کے صدرہوئے ہیں ریاست میں پارٹی کے فروغ کے لیے کام کر رہے ہیں۔ پٹولے نے لوگوں سے بھی اپیل کی کہ وہ کانگریس پارٹی کی مضبوطی کے لیے کام کریں۔اس پروگرام سے سابق وزیر سنیل دیشمکھ اور او بی سی شعبے کے ریاستی صدر بھانوداس مالی نے بھی خطاب کیا۔جبکہ اس موقع پر ریاستی کانگریس کے کارگزار صدر چندرکانت ہنڈورے، ریاستی نائب صدر اور سابق وزیر ڈاکٹر سنیل دیشمکھ، آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے سکریٹری اور نائب انچارج سونل پٹیل، جنرل سکریٹری دیوآنند پوار، جنرل سکریٹری پرمود مورے اور دیپتی چودھری کے ساتھ عہدیداران اور کارکنان بڑی تعداد میں موجود تھے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔