• 425
    Shares

نانا پٹولے

کانگریس نظریے کی فتح کے لیے قربانی کے جذبے سے کام کریں

کانگریس کے صدردفتر پر تقریب پرچم کشائی

ممبئی:ملک کو جو آزادی ملی ہے وہ بے مثال قربانیوں اورمحنتوں کا نتیجہ ہے۔ اس آزادی کے لئے بہت بڑی قیمت ادا کرنی پڑی ہے، لیکن بدقسمتی ہے کہ آزادی کی ڈائمنڈجوبلی کے موقع پر بی جے پی 14؍اگست کو بٹوارے کی ہولناک یاد کے طور پر منارہی ہے۔ یہ ایک جانب اگرانتہائی افسوسناک ہے تو وہیں یہ ملک کو دوبارہ تقسیم کرنے کی کوشش ہے۔یہ باتیں آج یہاں مہاراشٹرپردیش کانگریس کمیٹی کے صدرناناپٹولے نے کانگریس کے دفتر پر پرچم کشائی کی تقریب میں اپنے خطاب کے دوران کہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے ساتھ جو ملک آزاد ہوئے وہاں آمریت شروع ہوگئی لیکن ہمارے ملک میں جمہوریت کا آغاز ہوا جس کے حوالے سے آج ہمارے ملک کو دنیا میں سب سے بڑا جمہوری ملک ہونے کا فخر حاصل ہے۔بی جے پی ہمارے ملک کایہ فخر ختم کرنا چاہتی ہے۔ 14ا/ اگست جس دن ہمارے ملک کا بٹوارہ ہوا وہ ہمارے لیے ایک سیاہ دن ہے۔اس خونریز دن کو یادگار کے طور پر مناتے ہوئے نریندر مودی اوربی جے پی ملک کو ٹوٹنے کی سمت لے جارہے ہیں۔ ملک کی عوام کے درمیان مذہبی وذات برادری کی تفریق کو بڑھاوا دے کر سیاسی فائدہ حاصل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ ملک کی یکجہتی کو نقصان پہنچانے کے بی جے پی کے منصوبے کو کانگریس کے کارکنان کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ کانگریس صدرمحترمہ سونیا گاندھی وممبرپارلیمنٹ راہل گاندھی کی اہل قیادت نے مرکزی حکومت کے لیے چیلنج کھڑا کردیا ہے۔پٹولے نے کہا کہ ان کی قیادت میں کانگریس پارٹی کو نظریے کی فتح کے لیے ہمیں قربانی کے جذبے کے ساتھ کام کرنا ہوگا۔مجھے یقین ہے کہ اگر ہم نے ملک کی حقیقی محبت کے ساتھ کام کرنا شروع کیا تو کانگریس دوبارہ بلندی کے مقام پرپہنچے گی اور ملک وجمہوریت دونوں کو تحفظ حاصل ہوگا۔

پرچم کشائی کی اس تقریب میں ریاستی کانگریس کے کارگزار صدر نسیم خان، چندرکانت ہنڈورے، سابق وزیر سریش شیٹی، نائب صدر حسین دلوائی، خواتین کانگریس کی ریاستی صدر سندھیتائی سوالاکھے، سیوادل کے ریاستی صدر ولاس اوتاڈے، ریاستی جنرل سکریٹری راجن بھوسلے، راجیش شرما، پروفیسر پرکاش سوناؤنے، پرمود مورے، راجارام دیشمکھ،ڈاکٹر سیدذیشان احمد، ڈاکٹر راجو واگھمارے اور دیوانند پوار وغیرہ موجود تھے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔