تمام ایجنسیوں کو بھی اگر لگادیا گیا تو بھی ہمارے لیڈران خوف زدہ نہیں ہونگے:نواب ملک

آخر کیا وجہ ہے کہ بی جے پی این سی پی سے اس قدر گھبرارہی ہے؟ جینت پاٹل

ممبئی: ای ڈی، این آئی اے اوراین سی بی جیسی تمام ایجنسیوں کااستعمال مہاراشٹر حکومت کے ولیڈران کے خلاف ایک سازش کے تحت کیا جارہا ہے لیکن ہمارے لیڈران خوف زدہ ہونے والے نہیں ہیں بلکہ اس کے برعکس حکومت مزیدمضبوط ومستحکم ہورہی ہے۔ یہ باتیں آج یہاں این سی پی کے قومی ترجمان واقلیتی امور کے وزیر نواب ملک نے کہی ہیں۔این سی پی کے لیڈر ونائب وزیراعلیٰ اجیت پوار کی کمپنیوں پر محکمہ انکم ٹیکس کے چھاپے پر انہوں نے بی جے پی پرسخت حملہ کیا۔

نواب ملک نے کہا کہ جس طریقے سے اجیت پوار کی کمپنیوں پر چھاپہ مارا جارہا ہے اس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ مہاراشٹر اوران تمام ریاستوں میں جہاں بی جے پی مخالف پارٹیوں کی حکومت ہے، انہیں ٹارگیٹ کرنے اور بدنام کرنے کی منصوبہ بند مہم چل رہی ہے۔ جو صورت حال مغربی بنگال میں تھی، وہی صورت حال مہاراشٹر میں بھی مرکزی حکومت کے ذریعے پیدا کی جارہی ہے۔ نواب ملک نے کہا کہ گزشتہ کل آنے والے ضلع پریشد وپنچایت سمیتیوں کے ضمنی انتخابات کے نتائج اگرکچھ مختلف ہوئے توبھی 70فیصد سیٹیں عوام نے مہاوکاس اگھاڑی حکومت کودیا ہے۔ اس لئے مرکزکی بی جے پی حکومت ہمیں جس قدر بھی ٹارگیٹ کرے گی بنگال جیسی صورت حال ریاست میں پیدا ہوگی۔ نواب ملک نے کہا کہ لکھیم پورکھیری کے افسوسناک واقعے کے بعدریاست کی مہاوکاس اگھاڑی حکومت نے کسانوں کی حمایت میں آنے والے 11/اکتوبر کو مہاراشٹر بند کا اعلان کیا ہے۔نواب ملک نے اس یقین کا بھی اظہار کیا ہے کہ ریاست کی عوام بی جے پی ظالمانہ حکومت کے خلاف اس بند کو اپنا بھرپور تعاون دے گی۔

دریں اثناء این سی پی کے ریاستی صدرجینت پاٹل نے بھی اجیت پوار کی کمپنیوں پر انکم ٹیکس محکمہ کی چھاپے ماری پر اپنے ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ آخر کیا وجہ ہے کہ بی جے پی این سی پی سے اس قدر خوفزدہ ہوگئی ہے؟ اس پر غور کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے لیڈران کو بدنام کرنے کی جتنی بھی کوشش بی جے پی کے لوگ کریں گے، کامیاب نہیں ہونگے۔ ہمارا قانون پرپورا اعتماد ہے۔ اس سے قبل چھگن بھجبل کو بھی اسی طرح پریشان کیا گیا تھا بالآخر عدالت سے وہ تمام الزامات سے بری ہوگئے۔ این سی پی کے تمام لیڈران بے قصور ہیں، کسی کی جانب سے کوئی بھی غیرقانونی کام نہیں ہوا ہے، اس کے باوجود انہیں بدنام کیا جارہا ہے۔ جینت پاٹل نے کہا کہ چھاپہ ماری یاکارروائی سے قبل ہی بی جے پی کے لیڈران کو اس کی معلومات ہوتی ہے، اس لئے ملک کی عوام کو اب اس بات کا یقین ہوچلا ہے کہ جتنی بھی ایجنسیاں ہیں ان تمام کو بی جے پی اپنے سیاسی مفاد کے لئے استعمال کرتی ہے۔انہوں نے کہا کہ چونکہ لکھیم پورکھیری کے دلدوزہ واقعے کے بعد مہاوکاس اگھاڑی حکومت نے 11/اکتوبر کو مہاراشٹربندکا اعلان کیا ہے اس لئے بی جے پی کو یہ برداشت نہیں ہوا اور اس نے چھاپہ ماری کے ذریعے ہمارے لیڈران کو خوف زدہ کرنے کی کوشش کی ہے، لیکن بی جے پی کو معلوم ہونا چاہئے کہ اس کی یہ کوشش کبھی کامیاب نہیں ہوگی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔