کورونا کی زنجیر توڑنے کے لیے حکومت کے فیصلے کی کانگریس کی حمایت: ناناپٹولے

کورونا پر قابو پانے کے لیے عوام ریاستی حکومت کے ساتھ تعاون کریں

ممبئی: ریاست میں کورونا کے مریضوں کی تعداد میں روز بہ روز اضافہ ہونے کی وجہ سے صورت حال سنگین سے سنگین تر ہوتی جارہی ہے۔ حکومت نے فی الوقت ویکنڈ لاک ڈاؤن کے ساتھ کچھ سخت ہدایات جاری کی ہیں لیکن اگرکورونا کی زنجیر توڑنی ہے تو کچھ مزید سخت فیصلے لینے کی ضرورت ہے۔ اس کے لیے حکومت جو فیصلے کرے گی کانگریس پارٹی اس کی مکمل طور پر حمایت کرے گی۔ یہ باتیں آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ناناپٹولے نے کہی ہیں۔

ریاست میں کورونا کی صورت حال پیش نظر آج تمام پارٹیوں کے لیڈران سے بات چیت کی۔ اس موقع پر ناناپٹولے نے کچھ تجاویزات بھی پیش کیں۔ چونکہ ریاست میں سنگین صورت حال ہے اس لیے حکومت کوکچھ مزید سخت فیصلے کرسکتی ہے۔ لوگوں کی زندگیوں کو بچانا اولین ترجیح ہونی چاہیے۔ اگر کچھ سخت پابندیاں لگانے یا لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا جاتا ہے تو وہ نریندرمودی حکومت کے ذریعے لگائے گیے لاک ڈاؤن کی طرح نہیں ہونا چاہیے۔ مودی کے غیرمنصوبہ بند لاک ڈاؤن کی وجہ سے لاکھوں ملازمین کو اپنی ملازمتوں سے ہاتھ دھونے پڑگئے۔ لاکھوں لوگ بیروزگار ہوگئے اورعوام کا برا حال ہوگیا تھا۔ ناناپٹولے نے کہا کہ ریمیڈیسیور انجکشن کی مانگ بڑے پیمانے پر ہونے کی وجہ سے ریاست کے مریضوں کو وہ آسانی سے دستیاب کرانے کے لیے حکومت کو مناسب اقدام کرنے کی ضرورت ہے۔ نانا پٹولے نے کہا کہ کورونا پرقابوپانے کے لیے عوام کو متحدہ طور پر حکومت کا تعاون کرنا چاہیے۔