‎ بی جے پی سے پاک لاتور پیٹرن کو مراٹھواڑہ کے کونے کونے تک وسیع کریں: نانا پٹولے

کانگریس کو ریاست میں نمبر ون پارٹی بنانے میں لاتور ضلع اہم کردار ادا کریگا: امیت دیشمکھ

‎ نیلنگا تعلقہ کے تمام بی جے پی عہدیدار کانگریس پارٹی میں شامل
ممبئی:‎ کانگریس پارٹی میں شامل ہونے والوں کی تعداد میں دن بدن اضافہ ہو تاجارہا ہے اور اس سلسلہ کے مستقبل میں مزید وسیع ہونے کا قوی امکان ہے کیونکہ لاتور ضلع کے بی جے پی عہدیداروں کی ایک بڑی تعداد کانگریس میں شامل ہو گئی ہے اور لاتور ضلع کو بی جے پی سے آزاد کروانا شروع کر دیا ہے۔
‎گاندھی بھون میں ریاستی صدر نانا پٹولے، لاتور سٹی ڈسٹرکٹ کانگریس کمیٹی کے چیئرمین ایڈ کرن جادھو، لاتور ضلع کانگریس کمیٹی کے چیئرمین سری شیل اتگے، ریاستی جنرل سکریٹری اور لاتور ضلع انچارج جتیندر دیہاڑے، کانگریس لیڈر ابھے سالونکے کی موجودگی میں دیگر پارٹیوں سے کانگریس میں شامل ہونے والوں کے استقبالیہ پروگرام کا انعقاد ہوا۔
‎ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے نانا پٹولے نے کہا کہ بی جے پی نے اقتدار میں آنے کے بعد اپنا ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا۔ اقتدار میں آنے کے بعد سے ہی بی جے پی نے آئین کو ختم کرنے کی کوشش کردی جو ہنوز جاری ہے۔بی جے پی کے ذریعے مہاراشٹر کو بدنام کرنے کا گناہ بھی کیا جا رہا ہے۔ اب وقت آگیا ہے کہ بی جے پی کو جڑ سے اکھاڑپھینکا جائے اور بی جے پی سے ریاست کو پاک کیا جائے۔ آج لاتور سے بی جے پی کا صفایا شروع ہوا ہےاور اب بی جے پی سے پاک لاتور کے پیغام کو مراٹھواڑہ کے کونے کونے تک وسیع کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کانگریس پارٹی میں سبھی کا خیرمقدم کرتے ہوئے ان پر زور دیا کہ وہ مراٹھواڑہ میں کانگریس پارٹی کی کامیابی کے لیے سخت محنت کریں۔

‎ اس موقع پر لاتور کے سرپرست اور طبی تعلیم کے وزیر امیت دیشمکھ نے کہا کہ شیوراج پاٹل چاکورکر، شیواجی راؤ پاٹل نیلنگیکر، مرحوم ولاس راؤ دیشمکھ نے لاتور ضلع میں کانگریس پارٹی کو مضبوط بنایا۔ آج بی جے پی سمیت مختلف پارٹیوں کے عہدیداروں اور کارکنوں کی بڑی تعداد کانگریس پارٹی میں شامل ہوگئی ہے۔ یہ سب نچلی سطح کے کارکن ہیں۔ مستقبل میں ضلع پریشد، پنچایت سمیتی اور بلدیات پر کانگریس کا جھنڈا نہیں لہرایا جائے گا۔ کانگریس کو ریاست کی نمبر ایک پارٹی بنانے میں لاتور ضلع کا بڑا حصہ ہوگا جس کے لیے ریاستی صدر نانا پٹولے نے خود انحصاری کا نعرہ دیا ہے۔

‎ لاتور ضلع کے نیلنگا، احمد پور، چکور اور تعلقہ میں مختلف پارٹیوں کے عہدیداروں نے کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ خاص طور پر نیلنگا تعلقہ کے تمام بی جے پی عہدیداروں کے ساتھ ساتھ این سی پی اور ایم آئی ایم کے عہدیداروں اور کارکنوں نے بڑی تعداد میں کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ کانگریس میں شامل ہونے والوں میں نیلنگا پنچایت سمیتی کے سابق چیئرمین اجیت توکارام مانے، نیلنگا کے سابق میئر حامد ابراہیم شیخ، این سی پی یوتھ کانگریس کے ریاستی جنرل سکریٹری چکرادھر شیلکے، پنچایت سمیتی کے رکن رمیش سوناونے، بی جے پی مہیلا مورچہ کے ریاستی نائب صدر شامل ہیں۔ سواتی وکرم جادھو، نیلنگا تعلقہ بی جے پی کے سابق سٹی صدر سنجے سدھاکر سبیدار، نیلنگا کے سینئر بی جے پی لیڈر ابا صاحب گووند راؤ پاٹل، سابق پنچایت سمیتی ممبر نیلنگا ولاس ونائک لوبھے، شیڈولڈ مورچہ لاتور ضلع کی صدر انیتا سدھاکر رسل، نیلنگا بار ایسوسی ایشن کے صدر ایڈوسن مانل منال منیر۔ نیلنگا بار ایسوسی ایشن کے سکریٹری پروین نرھارے، ایم آئی ایم نیلنگا کے صدر منجیب عبد سیکڑوں کارکنان بشمول انل چوان، اوما کانت پرہلاد ساونت، خدابدین گھوڑپڑے، سابق ضلع پریشد رکن دیوآنند مولے نے کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔