MPCC Urdu News 27 July 22

20

مودی حکومت سے سوال کرنے کی وجہ سے سونیاوراہل گاندھی سے ای ڈی کی تفتیش: ناناپٹولے

انگریزوں کی حکومت سے زیادہ ظالم بی جے پی حکومت ہے، عوام اسے اقتدارسے بے دخل کردے گی

ظالم وجابرمودی حکومت کے خلاف دوسرے روز بھی کانگریس کا ریاست بھر میں ’ستیہ گرہ‘

ممبئی: مرکزی حکومت نے دودھ، دہی، تیل، گھی اوردیگر کھانے پینے کی ضروری اشیاء پر جی ایس ٹی لگادیا ہے جس کا خمیازہ عوام کو بھگتنا پڑے گا۔جی ایس ٹی، مہنگائی، بیروزگاری واگنی پتھ اسکیم جیسے موضوعات پرکانگریس ودیگر اپوزیشن پارٹیاں پارلیامنٹ میں آواز اٹھانا چاہتی تھیں، جسے دبانے کے لیے فرضی مقدمات کے تحت سونیاگاندھی کی ای ڈی کے ذریعے تفتیش کی جارہی ہے۔یہ الزام آج یہاں مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر نانا پٹولے نے لگایا ہے۔

کانگریس کی صدر محترمہ سونیا جی گاندھی کو ای ڈی نے مسلسل دوسرے دن پوچھ گچھ کے لیے طلب کرنے کے خلاف ریاستی کانگریس نے مرکز کی مودی حکومت کی مذمت کرتے ہوئے ریاست بھرمیں آج دوسرے روز بھی ستیہ گرہ کیا۔کانگریس کے ریاستی صدر ناناپٹولے کی قیادت میں نیوممبئی میں ستیہ گرہ کیا گیا جس میں ریاستی کارگزار صدر نسیم خان، شعبہ خواتین کی ریاستی صدر سندھیا تائی سوالاکھے، ایم ایل اے وجاہت مرزا، ریاستی جنرل سکریٹری پرمود مورے، نوی ممبئی کانگریس کے صدر انیل کوشک، سنتوش شیٹی، مہیندر گھرت،ایم ایل اے دپتی چودھری سمیت کانگریس کے سیکڑوں کارکنان موجود تھے۔

اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے نانا پٹولے نے کہا کہ مودی حکومت کے دور میں ای ڈی، سی بی آئی جیسے ادارے آزاد نہیں رہ گئے ہیں، ان اداروں کو مودی حکومت نے اپنی کٹھ پتلی بنا رکھا ہے اور وہ حکومت کے اشاروں پر حکومت کے مخالفین کو جھوٹے مقدمات میں پھنسانے کی کوشش کر رہے ہیں۔پارلیامنٹ کے رواں اجلاس میں کانگریس جی ایس ٹی واگنی پتھ اسکیم پر بحث کا مطالبہ کررہی ہے لیکن مودی حکومت بحث سے بھاگ رہی ہے۔پارلیامنٹ میں حکومت سے سوال کرنے والے ممبران کو لوک سبھا اور راجیہ سبھا سے معطل کیا جا رہا ہے۔محترمہ سونیا گاندھی و راہل گاندھی عوام کی آواز اٹھا رہے ہیں جس سے ڈرکر مرکزی حکومت ان کی آواز کو دبانے کی کوشش کر رہی ہے۔ مرکزی حکومت کے اس جبروظلم کے خلاف کانگریس پارٹی ملک بھر میں پرامن ستیہ گرہ کر رہی ہے، لیکن اسے بھی پولیس فورس کے ذریعے دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔کانگریس کے لیڈر راہل گاندھی ویوتھ کانگریس کے صدر شری نواس سمیت 57ممبرانِ پارلیامنٹ کو پولیس نے دہلی میں ستیہ گرہ کرتے ہوئے حراست میں لیا اور دن بھر انہیں قید میں رکھا۔بی جے پی حکومت برٹش حکومت سے زیادہ ظالم ہوگئی ہے۔ کانگریس نے ستیہ گرہ کرتے ہوئے ظالم انگریزوں کی حکومت کو ملک سے باہر بھاگنے پرمجبور کیا تھا اور مرکزکی بی جے پی حکومت بھی ایک دن یقینی طور پر بھاگنے پرمجبور ہوگی۔محترمہ سونیا گاندھی بیمارہیں اس کے باوجود تفتیش کے نام پر انہیں ہراساں کیا جارہا ہے، اس لیے ریاست کے تمام ضلعی ہیڈکوارٹرس بشمول نوی ممبئی، پونے، ناگپور، شولاپور، اکولہ و ناندیڑ میں ظالم بی جے پی حکومت کے خلاف ستیہ گرہ کیا گیا۔