فڈنویس کا بیان غیرذمہ دارانہ ہے: یشومتی ٹھاکور

بی جے پی امراؤتی کا ماحول خراب کرنے کی کوشش نہ کرے

ممبئی:بی جے پی امراؤتی کا ماحول خراب کرنے کی کوشش نہ کرے۔ امراؤتی کے لوگ ایسی نفرت انگیز سیاست کا شکار نہیں ہوں گے۔12 اور 13 تاریخ کو امراؤتی میں جو کچھ ہوا وہ امراؤتی کی تاریخ کا ایک سیاہ باب ہے۔اب اس پر معاملے پر کوئی سیاست کرنے کی کوشش نہ کرے۔ یہ باتیں آج یہاں امراؤتی کی نگراں وزیر ایڈووکیٹ یشومتی ٹھاکور نے کہی ہیں۔

امراؤتی کے دورے کے دوران اپوزیشن لیڈر دیویندر فڈنویس کے ذریعے عائد الزامات کا جواب دیتے ہوئے ایڈووکیٹ یشومتی ٹھاکور نے کہا کہ امراؤتی کے لوگ سمجھدار ہیں اوروہ فسادیوں کے پروپیگنڈے کا شکار نہیں ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ امراؤتی میں حالات کو قابو میں لانے کے لئے ریاست کے لوگوں نے حکومت کی بہت مدد کی ہے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ریاست کے لوگ مکمل طور پر امن وامان چاہتے ہیں۔ میں ریاست کے لوگوں کا شکریہ ادا کرتی ہوں۔ ریاست کو امن کی ضرورت ہے اور یہ حکومت کسی بھی صورت امن وامان کو خراب نہیں ہونے دے گی۔

محترمہ ٹھاکور نے کہا کہ ریاست کے اپوزیشن لیڈر دیوندرفڈنویس ایک ذمہ دار لیڈر ہیں لیکن ایسا لگتا ہے کہ وہ ووٹوں کی سیاست کے لئے ریاست کا ماحول خراب کرنا چاہتے ہیں۔امراؤتی میں 12 اور 13 تاریخ کو پیش آنے والے دونوں واقعات یکساں افسوسناک اور قابل مذمت ہیں۔ دونوں واقعات میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کی جا رہی ہے۔یہی نہیں بلکہ ان افسوسناک واقعات کا استعمال کرتے ہوئے سماجی ہم آہنگی کو خراب کرنے کی کوشش کرنے والے سائبر مجرموں کا بھی اسپیشل اسکواڈ کے ذریعے تلاش کئے جانے کی مہم جاری ہے۔ انہیں بھی بہت جلد گرفتار کیا جائے گا اور کارروائی کی جائے گی۔انہوں نے کہاکہ آج اپوزیشن لیڈر دیوندرفڈنویس نے امراؤتی کا دورہ کرکے وہاں کے ماحول کو ایک بار پھر خراب کرنے کی کوشش کی ہے۔امراؤتی نے ہمیشہ سب کا خیر مقدم کیا ہے لیکن بہتر ہوتا کہ وہ امراؤتی آکر امن وامان کی اپیل کرتے لیکن انہوں نے اس واقعہ کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش کی۔اپنی پریس کانفرنس میں دیویندر فڈنویس نے اعتراف کیا کہ 13 تاریخ کو جوواقعہ ہوا وہ غلط تھا، لیکن انہیں اس واقعے کی ذمہ داری تسلیم کرتے ہوئے ایک پرامن شہر کے امن وامان کو خراب کرنے کے لئے ریاست کے لوگوں سے انہیں معافی بھی مانگنی چاہئے۔

یشومتی ٹھاکورنے کہا کہ 12اور 13تاریخ کو وقوع پذیر ہونے دونوں واقعات پر مناسب توجہ دی گئی ہے۔حکومت کے اس موقف کو بیان کرتے ہوئے کہ کسی کو بھی نہیں بخشا جائے گا، فڈنویس عوام کو ادھوری معلومات دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ رضااکیڈمی کے سیاسی تعلقات کس سے ہیں؟ یہ سبھی کو معلوم ہے۔ رضااکیڈمی کی تفتیش کی جارہی ہے اور اس پر وزارت داخلہ جو ضروری ہوا کارروائی کرے گا۔ اس ضمن میں ریاست کے وزیرداخلہ جلد ہی وضاحت کریں گے۔ اس کے علاوہ اس ضمن میں اسمبلی میں بھی بات کی جائے گی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔