MPCC Urdu News 1June 22

0 2

سونیاگاندھی کو ای ڈی نوٹس جمہوریت کے لئے تشویشناک:بالاصاحب تھورات

بی جے پی حکومت کے ذریعے ای ڈی کا سیاسی ادارے کے طور پر استعمال

پورے ملک کی عوام سونیاگاندھی وراہل گاندھی کے ساتھ ہیں

مرکزی ایجنسیوں کا بی جے پی کے ذریعے غلط استعمال

شرڈی: ملک میں آمریت ویک شخصی اختیار بڑھانے والی بی جے پی حکومت نے مرکزی ایجنسیوں کا مسلسل غلط استعمال کیا ہے۔ نیشنل ہیرالڈ معاملے میں کانگریس کی سربراہ محترمہ سونیاگاندھی وممبرپارلیمنٹ راہل گاندھی کو ای ڈی کی نوٹس جمہوریت کے لئے نہایت تشویشناک ہے۔ پورے ملک کی عوام آج سونیاگاندھی وراہل گاندھی کے ساتھ ہے۔ یہ باتیں آج یہاں قانون سازکونسل کے لیڈر وریاستی وزیرمحصول بالاصاحب تھورات نے کہی ہیں۔ وہ شرڈی میں کانگریس کے ’نوسنکلپ کیمپ‘ میں میڈیا کے نمائندوں سے خطاب کررہے تھے۔ اس موقع پر سابق وزیراعلیٰ پرتھوی راج چوہان، ریاستی ترجمان اتل لونڈھے، ڈاکٹر سچن ساونت، آشیش دووا وغیرہ موجود تھے۔

بالاصاحب تھورات نے کہا کہ مرکزی ایجنسیوں کے استعمال کے ذریعے بی جے پی حکومت اپنے مخالفین کو بدنام اور خوفزدہ کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ ملک میں ذات پات وفرقہ وارانہ کشیدگی پیداکرکے جمہوریت پر راست حملہ شروع کردیا گیا ہے۔ نیشنل ہیرالڈ معاملے میں محترمہ سونیاگاندھی وراہل گاندھی کو ای ڈی کے ذریعے دی گئی نوٹس نہایت افسوسناک ہے اور جمہوریت کی تشویش میں اضافہ کرنے والی ہے۔ بی جے پی حکومت کے ذریعے مسلسل جمہوریت پر حملہ کیا جارہا ہے جو ملک کے لئے نہایت خطرناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں پورا ملک محترمہ سونیا گاندھی وراہل گاندھی کے ساتھ ہے۔ بی جے پی کی اس آمریت کے خلاف ملک کی عوام میں زبردست ناراضگی پھیل گئی ہے۔

اس پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعلیٰ پرتھوی راج چوہان نے کہا کہ اودئے پور سنکلپ کیمپ میں اکنامکس گروپ کے ذریعے مودی کی موجودہ پالیسیوں پر سخت ناراضگی ظاہر کی گئی تھی۔ سرکاری کمنیوں کے کچھ سرمایہ داروں کو کوڑیوں کے دام میں فروخت کرنے، ریاستوں کے اختیارات کو کم کرنے جیسے مسائل کے ساتھ ہی مستقبل کے لئے جدید ٹیکنالوجی کے حامل افراد تیار کرنے ہونگے۔ ۰۹۹۱کی معاشی تبدیلی کے بعد ٹیلی کوم وپٹرولیم سیکٹر چند سرمایہ داروں کے ہاتھ میں چلے گئے ہیں۔ اودئے سنکلپ کیمپ میں اکنامکس گروپ نے اس بات کا بھی خدشہ ظاہر کیا تھا کہ مہنگائی کی وجہ سے ملک میں زبردست کسادبازاری آئے گی۔ لیکن مرکزی حکومت ان مسائل پر قابوپانے کے بجائے مرکزی ایجنسیوں کے ذریعے اپنے مخالفین کو بدنام کرنے میں مست ہے۔