• 425
    Shares

کیا ساورکر نے راج ناتھ سنگھ کے خواب میں آکر یہ بتایاکہ انہوں نے معافی کیوں مانگی؟: اتل لونڈھے

جھوٹی تاریخ بتانے کے بجائے وزیردفاع سرحد پر چین کی کارروائیوں پر توجہ دیں

ممبئی: وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ کا یہ بیان کہ ونائک دامودر ساورکر نے مہاتما گاندھی کے کہنے پر انگریزوں سے معافی مانگی تھی، سراسر جھوٹا اور گمراہ کن ہے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کی تاریخ کو مسخ کرکے لوگوں کو گمراہ کرنے کی فطرت ہے اورساورکر کے بارے میں دیا گیا راج ناتھ سنگھ کا یہ بیان بھی ویسا ہی ہے۔ کیا ساورکر نے راج ناتھ سنگھ کو خواب میں آکر یہ بتایا ہے کہ انہوں نے انگریزوں سے معافی کیوں مانگی؟ یہ سوال مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے جنرل سکریٹری اور ترجمان اتل لونڈھے نے کیا ہے۔

راج ناتھ سنگھ کے بیان پر تنقید کرتے ہوئے لونڈھے نے کہا کہ ساورکر اور مہاتما گاندھی کے درمیان نظریاتی اختلافات تھے۔ یہ بات مشہور ہے کہ ساورکر نے جیل سے رہائی کے لیے برطانوی حکومت سے بار بار معافی مانگی تھی۔ ساورکر کو 1911 میں انڈمان جیل بھیج دیا گیا۔ رہائی کے چھ ماہ بعد ساورکر نے اپنی پہلی معافی انگریزوں کو بھیجی تھی۔ دوسرامعافی نامہ ساورکر نے 14؍نومبر1913کو انگریزوں کو بھیجی تھی اس وقت گاندھی جی جنوبی افریقہ میں تھے۔ گاندھی جی 9 جنوری 1915 کو جنوبی افریقہ سے ہندوستان آئے تھے۔ اس حقیقت کے باجود راج ناتھ سنگھ کا یہ بیان کہ مہاتما گاندھی کے کہنے پرساورکر نے معافی مانگی تھی خیالی اور مضحکہ خیز ہے۔ مہاتما گاندھی کے بارے میں آرایس ایس وبی جے پی کے نظریات کتنے گھٹیا ہیں اس کے بارے میں پوری دنیا جانتی ہے۔ راج ناتھ سنگھ نے بھی سنگھ کی تعلیمات کے مطابق غلط بیان دے کر لوگوں گمراہ کرنے کی کوشش کی ہے۔

اتل لونڈھے نے کہا کہ راج ناتھ سنگھ ملک کے وزیر دفاع ہیں، لیکن وہ کبھی بھی دفاع کے بارے میں زیادہ بات کرتے نظر نہیں آتے۔ چین ہماری سرحدوں میں گھس کرہماری سرزمین پرقبضہ کر لیا ہے۔ پاکستان ہر روز سرحد پر شرانگیزی کررہا ہے جس میں ہمارے فوجیوں کی ناحق بلی چڑھ رہی ہے۔ لیکن وزیردفاع نے اس پر کبھی بات نہیں کی۔جھوٹی اور غلط معلومات پھیلاکر سماج میں گمراہی وغلط فہمی پیدا کرنے کے بجائے راج ناتھ سنگھ اس بات پرتوجہ دیں کہ ملک کی سرحدیں محفوظ رہیں، دشمن ممالک شرانگیزی کی ہمت نہ کریں، چین وپاکستان بھارت کی جانب ٹیڑھی نظروں سے دیکھنے کی جرات نہ کریں۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔