Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

بھیونڈی جیلانی بلڈنگ سانحہ : تمام کارپوریٹر ایک ماہ کی تنخواہ متاثرین کو پیش کردیں۔تنظیم علماء اہلسنت کا مطالبہ

بھیونڈی ( ایس اے ):- بھیونڈی کے دھامنکر ناکہ پر واقع پٹیل کمپاونڈ کی جیلانی بلڈنگ ۲۱ ستمبر کی رات 3 بجکر 20 منٹ پر اچانک زمین بوس ہوگئی جس میں 39 لوگ شہید اور 25 افراد زخمی ہوگئے تھے اس حادثہ کا شکار ہونے والے افراد اب تک بڑی کسمپرسی میں ہیں ۔ حادثے کو اب تقریبا ایک ماہ گذر گیا ہے اس لیے اہلیان شہر اس کو بھول گئے ہیں ابتداء میں تو کچھ لیڈران اور NGOS نے راحت رسانی کا کام کیا مگر اب سب خاموش ہیں اور تباہ حال لوگ اب دربدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔ان کا سب کچھ تباہ ہوگیا ہے ان کے پاس نہ کپڑا ہے نہ برتن،نہ مکان ہےنہ سر چھپانے کی کوئی جگہ ،زیادہ تر لوگ اپنے رشتہ داروں کے یہاں پناہ لیے ہوئے کسی مدد کا انتظار کررہے ہیں ۔

تنظیم علماء اہلسنت بھیونڈی ان کی باز آباد کاری کی کوششوں میں لگی ہے ۔ تنظیم کی طرف سے ان کو کپڑا،راشن اور برقعہ وغیرہ دیا گیا اور جن لوگوں کی رہائش کا کوئی انتظام نہ تھا ان کے لیے کوٹرگیٹ کے مدرسہ میں عارضی قیام و طعام کا انتظام بھی کیا گیا تھا۔ مولانا یوسف رضا نے بتایا کہ چودہ خواتین نے ہم سے رہائش فراہم کرنے کی اپیل کی ہے جس کی بنیاد پر شہر کے علماء نے ان چودہ لوگوں کو ایک سال کے لیے مکان کرائے سے دلانے کا فیصلہ کیا ہے جس کے لیے علماء شہر کے اہل ثروت حضرات سے رابطہ کر رہے ہیں ۔اس سلسلے میں جب علماء نے نظام پور کے کارپوریٹر بابا فراز بہائو الدین سے رابطہ کیا تو انھوں نے ایک شخص کے لیے مکان دلانے کا وعدہ کیا اور یہ تجویز رکھی کہ بھیونڈی کے 90 کارپوریٹرہیں اگر سب ایک ماہ کی تنخواہ جوکہ 10 ہزار ہے اس کام کے لیے دے دیں تو ان چودہ گھر والوں کو آباد کیا جاسکتا ہے ۔

اس بنیاد پر تنظیم علماء اہلسنت بھیونڈی کے کارپوریٹروں سے اپیل کرتی ہے کہ وہ اپنی ایک ماہ کی تنخواہ ان تباہ حال لوگوں کی باز آباد کاری کے لیے دے دیں تو ان سب لوگوں کی فوری رہائش کا انتظام ہوجائے گا واضح رہے کے ان کو صرف مکان ہی نہیں بلکہ برتن کپڑا اور ضروریات زندگی کی ہر چیز کی حاجت ہے اس لیے کہ ان کا سب کچھ اس حادثے میں تباہ ہوگیا ہے۔ تنظیم علما ء اہلسنت امید کرتی ہے کہ تمام کارپوریٹر ہماری اپیل پر لبیک کہتے ہوئے یہ تعاون پیش کرینگے اورانسانیت اور ہمدردی کی ایک مثال قائم کریں گے ۔