ایم آئی ایم اور عام آدمی پارٹی نے برہان پور میں کانگریس کا کھیل خراب کیا، بی جے پی کی میئر منتخب

1,132

 برہانپور:(ورق تازہ نیوز)مدھیہ پردیش کے شہری باڈی انتخابات کے نتائج چونکا دینے والے ہیں۔ کانگریس کو برہان پور میں جیت کا یقین تھا اور انتخابی شخصیات بھی اس کی حمایت کر رہی تھیں، لیکن پہلی بارمیونسپل کارپوریشن الیکشن میں اترنے والی عام آدمی پارٹی (اے اے پی) اور آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) نے بڑا اُلٹ پھیر کیا اور بی جے پی نے میئر کی سیٹ  بہت کم فرق سے جیتی۔

اے آئی ایم آئی ایم نے کانگریس کو بہت نقصان پہنچایا
بی جے پی کی مادھوری پٹیل نے برہان پور کی میئر کی سیٹ پر قبضہ کر لیا ہے۔ پٹیل نے کانگریس کی شہناز اسماعیل عالم کو صرف ایک ہزار ووٹوں کے فرق سے شکست دی۔ خاص بات یہ ہے کہ یہاں اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم نے 10 ہزار سے زیادہ ووٹ حاصل کیے، جب کہ عام آدمی پارٹی کو بھی تقریباً 3 ہزار ووٹ ملے۔ بی ایس پی نے بھی تقریباً 3 ہزار ووٹ کاٹے اور ان تمام ووٹوں نے کانگریس کو ہی نقصان پہنچایا۔ کانگریس پانچ راؤنڈ تک آگے تھی لیکن چھٹے اور آخری راؤنڈ میں بی جے پی نے برتری حاصل کر لی۔

میئر چناو میںکس کو کتنے ووٹ ملے؟
BJP-52629
INC-52241
AIMIM-10322
AAP-2908
NOTA-674
Other-4106

کانگریس کو صرف 388 ووٹوں سے شکست ہوئی
بی جے پی کی مادھوری پٹیل کو 52629 ووٹ ملے جبکہ کانگریس کی شہناز اسماعیل عالم کو 52241 ووٹ ملے۔ خیال کیا جاتا ہے کہ اویسی کی پارٹی آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کی امیدوار شائستہ ایڈوکیٹ سہیل ہاشمی نے بڑی چھلانگ لگائی اور 10322 ووٹ حاصل کیے۔ پہلی بار شہری انتخابات میں اترنے والی عام آدمی پارٹی کی پرتیبھا سنتوش سنگھ ڈکشٹ کو 2908 ووٹ ملے۔ بی ایس پی امیدوار کویتا پرمود گاڈے نے بھی کانگریس کو نقصان پہنچانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ہے اور 3185 ووٹ حاصل کر کے دھکا لگایا ہے۔
یہ ذات کے ووٹوں کاحساب کتاب اس طرح ہے
میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں برہان پور میں تقریباً 1.26 لاکھ ڈالے گئے ہیں۔ تقریباً 70-72 فیصد ووٹر ٹرن آؤٹ ہوتا ہے۔ یہاں کل 1.77 لاکھ ووٹ ہیں۔
89 ہزار خواتین، 88 ہزار مرد، 914 دیگر۔
28 ہزار بنیا۔ووٹر
30 ہزار تیلی، گجراتی ووٹر
6 ہزار سندھی ووٹر
35 ہزار انصاری مسلمان ووٹر
50 ہزار مسلمان ووٹر
14 ہزار ہریجن سماج ووٹر
30-35 ہزار کنبی، مالی سما ج ووٹر