18 ستمبر کوناندیڑ میں سقوط حیدرآباد(تاریخ کے آئینہ میں)جلسہ عام

169

ناندیڑ:15ستمبر۔ (ورق تازہ نیوز)سقوط حیدرآباد (تاریخ کے آئینہ میں) کے عنوان سے مسلم نمائندہ کونسل ناندیڑ کی جانب سے 18 ستمبر بروز اتوار کو شام سات بجے سے شب دس بجے تک پاکیزہ فنکشن ہال دیگلورناکہ پُل ناندیڑ میں جلسہ عام رکھا گیا ہے۔جس میں اہم مقرر کی حیثیت سے ماہر تاریخ لنگانا پانڈورنگاریڈی صاحب ‘ (حیدرآباد) ‘ ضیاءالدین نیر (صدرتعمیر ملت حیدرآباد) شرکت کررہے ہیں۔

اس ضمن میں آج دوپہر دیگلورناکہ پر ایک کونسل کی جانب سے پریس کانفرنس کاا ہتمام کیاگیاتھا ۔اس بارے میں مزید تفصیلات بتاتے ہوئے کونسل کے صدر عابد علی نے بتایا کہ حکومت مسلمانوںکی تاریخ کو مسخ کررہی ہے۔ بالخصوص ریاست حیدرآباد کا 17ستمبر 1948ء کو انڈیا میں الحاق ہواتھا لیکن حکومت اس انضمام کو ایک الگ رنگ دے رہی ہے ۔مرکزی حکومت نے امسال 17ستمبر کو لبریشن ڈے منانے کا فیصلہ کیا ہے۔جس کی کونسل مخالفت کرتی ہے ۔

کیونکہ کسی بھی اعتبار سے اس دن کو لبریشن ڈے کے طو ر پر نہیں منایا جاسکتا ہے ۔اس دن بڑے پیمانے پر قاتل و غارت گیری ہوئی تھی جس میں مسلمانوں کو چُن چُن کر قتل کیاگیاتھا۔اسی لئے نئی نسل کوتاریخ کے حقائق سے روشناس کروانے کےلئے مسلم نمائندہ کونسل کے زیراہتمام سقوط حیدر آباد عنوان کے تحت عظیم الشان جلسہ عام رکھاگیا ہے جس میں حیدرآباد سے ماہر تاریخ داں کو مدعو کیاگیا ہے جوحقیقی تاریخ کوبیان کریںگے۔انھوں نے عوام النا س سے پروگرام میں کثیرتعدادمیںشرکت کی اپیل کی ہے ۔اس پریس کانفرنس میں کونسل کے ذمہ دار ناصر خطیب ‘ مفتی احمد صاحب موجود تھے۔