1. ضلع میں بارش سے ساڑھے پانچ لاکھ ہیکٹر فصلوں کا نقصان-2- گریجویٹ حلقہ انتخاب ووٹرس لسٹ میں اندراج کی آخری تاریخ 6نومبر -3-شہر کی اہم سڑکوںکی حالت انتہائی خستہ

0 41

ناندیڑ:یکم نومبر ۔(ورق تازہ نیوز)ضلع میں بارش کا موسم ختم ہونے کے بعد بھی گزشتہ چنددنوں سے طوفانی بارش ہورہی ہے جس کی وجہہ سے کسانوں کی ہاتھ آئی فصلیں تباہ وبرباد ہوچکی ہیں ۔جس سے وہ معاشی بحران کاشکار ہوگئے ہیں ۔ 18تا28اکتوبرکے درمیان واپسی کی بارش سے سویابین کی 80فیصد اور کپاس کی 40فیصد جبکہ جوار کی 60فیصد فصل کانقصان ہوا ۔اس طرح خریف سیزن میں مجموعی طور پر چار لاکھ 11ہزار 375ہیکٹر کاعلاقہ متاثر ہوا ہے اس طرح کی رپورٹ ضلع انتظامیہ نے روانہ کی ۔امسال دیوالی کسانوں کیلئے روشنی نہیں بلکہ اندھیرا لے آئی امسال ابتداءمیںبارش نے دھوکہ دیاتھا جس سے کسان بارش کیلئے پریشان تھے اوردوبارہ تخم ریزی کی نوبت بھی آئی ۔دیڑھ ماہ انتظار کے بعد بارش شروع ہوئی اس لئے کسانوں نے کپا س ‘سویابین اور جوار کی تخم ریزی کی ۔ضلع میں امسال پہلی مرتبہ کپاس سے زیادہ سویابین کی تخم ریزی کی گئی ۔سویابین فصل کیلئے حالات سازگار تھے جس کی وجہہ سے کسانوں نے زیادہ اسی فصل پر زوردیا ۔لیکن واپسی کی بارش نے کپاس اورسویابین کی فصلوں کوتباہ کرکے رکھ دیا ۔ 18اکتوبر سے ضلع میںواپسی کی طوفانی بارش شروع ہوئی اور مسلسل دس تا پندرہ دنوں تک بارش ہوئی جس سے کھیتوں میں پانی جمع ہوگیاجس میں کپاس اور سویابین ‘تور ‘ مکاء‘ ہائبریڈ جیسی فصلوں کا نقصان ہوا ۔ضلع میں سویابین کی تخم ریزی 3لاکھ 70ہزار ہیکٹر پر ہوئی تھی ۔ جس میںسے دو لاکھ 41ہزار498 ہیکٹر علاقہ کی سویابین کونقصان پہنچااور کپاس کی تخم ریزی دو لاکھ 31ہزار ہیکٹرعلاقہ پرہوئی تھی ۔ جس میںسے ایک لاکھ 17ہزار 198ہیکٹر پرکپاس کانقصان ہوا ۔جوار کی فصل 35ہزار600ہیکٹرپراگائی گئی جس میں22ہزار124ہیکٹرکی فصل کو نقصان ہوا ۔ مجموعی طور پر خریف سیزن میں تخم ریزی سات لاکھ 58ہزار ہیکٹرپرہوئی اور چار لاکھ 11ہزار375ہیکٹرعلاقہ بارش سے متاثرہوا ہے ۔اس طرح کی اطلاع ضلع کلکٹر ارون ڈونگرے نے دی ۔

جبری چوری اورچوری کی تین وارداتوں میں84ہزارکا مال چوری

ناندیڑ:یکم نومبر ۔(ورق تازہ نیوز)ناندیڑ شہر میںجبری چوری اور نائیگاوں ‘ اردھاپور اورکنوٹ میںچوری کی تین وارداتیں رونما ہوئی ہیں۔جس میں85ہزار 804 روپیوں کامال چوری ہوا ہے ۔مدکھیڑ تعلقہ کے روپواٹیکا ناگولی گاوں کے گجانن بالاجی گوہانے نے شکایت درج کروائی کہ 30 اکتوبر کودوپہر دیڑھ تا شام ساڑھے پانچ بجے کے درمیان اپنے گھر کوقفل لگاکرباہر گئے تھے اس دوران چوروںنے گھر کاقفل توڑکر 51ہزار روپے نقد چوری کرلئے ۔ اردھاپور پولس نے اس معاملے میں مقدمہ درج کردیا ۔نائیگاوں تعلقہ کے کیدار وڈگاوں کے پرکاش ناگناتھ جادھو نے شکایت درج کروائی کہ 30اکتوبرکوشب دس بجے اپنے دوست کے گھر محوخواب تھے ۔ 31اکتوبرکی درمیانی شب دو بجے انکے بھائی کے مکان کاقفل توڑ کر چورالماری سے سونے چاندی کے زیورات ونقد رقم سمیت 21ہزار500 روپے کامال چوری کرلیا ۔نائیگاوں پولس نے چوری کامقدمہ درج کردیا ۔ناندیڑ شہر میں ڈکیتی کی واردات 30اکتوبر کوشب پونے آٹھ بجے رونما ہوئیی ۔ نوناتھ ماروت راو کدم عمر 49 سال آنندنگر تا وسنت نگر جانیوالی سڑک سے پیدل جارہے تھے کہ عقب سے اسکوٹی پر آئے تین نوجوانوں میںسے ایک نے نوناتھ پر مارپیٹ کی اور ان کے پاس موجود رقم مانگی توانھوں نے دینے سے انکار کردیاسلئے انھیںدوبارہ مارپیٹ کی اور جبراً جیب سے ایک ہزار روپے نقد و موبائیل فون چوری کرلیا۔ شیواجی نگر پولس نے اس معاملے میںڈکیتی کامقدمہ درج کردیا ۔ کنوٹ پولس اسٹیشن میں کماری اپوروا روی ترموار نے شکایت درج کروائی کہ گزشتہ دنوںدوپہرکے وقت وہ اپنی والدہ کے ہمراہ دیودر شن کیلیے بیرون شہر گئی تھی ۔ جب دونوں گھر و اپس آئے توگھر کی کھڑکی تیڑھی تھی اورگھر سے موبائیل فون ونقد رقم چوری ہوگئی تھی ۔کنوٹ پولس نے مقدمہ درج کردیا ہے ۔


ریلوے اسٹیشن تادیگلورناکہ سڑک ”موت کاکنواں“

ناندیڑ©:یکم نومبر ۔(ورق تازہ نیوز)ناندیڑشہر میں برسات کے بعد سڑکوںکی حالت انتہائی خستہ ہوگئی ہے ۔ جس کی طرح میونسپل کارپوریشن کوفوری توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔بالخصوص شہر میںداخل ہونے والی اہم سڑک دیگلورناکہ تا بافناٹی پوائنٹ کی حالت انتہائی خراب ہے ۔جسے لوگ ”موت کاکنواں“ کہہ رہے ہیں۔کیونکہ اس سڑک سے گاڑی والوں کا گزرنا کافی دشوار ہوگیا ہے ۔سب سے زیادہ پریشانی ٹووہیلر گاڑی والوں کوہورہی ہے ۔ا سکے علاوہ ہنگولی گیٹ اووربریج‘انابھاوساٹھے چوک کاراستہ پوری طرح اکھڑگیا ہے ۔وی آئی پی روڈ‘قدیم مونڈھا پُل ‘بھاگیہ نگرناگرجنا سڑکوں پر گڑھے ہوگئے ہیں جہاں پرحادثات کاخطرہ بڑھ گیا ہے ۔لوک سبھا انتخابات کے ضابطہ اخلاق نفاذ سے تین دن قبل جلد بازی میں ٹینڈر نرخ کی بنیاد پر گڑھے بند کرنے کیلئے پانچ کروڑ کاٹینڈر منظورکیاگیا ۔ جس گتہ دار کویہ کام دیاگیاتھااس نے پہلے ہی میونسپل کارپوریشن کے بیشتر کام وقت پر مکمل نہیں کئے تھے لیکن سابقہ وزیراعلیٰ کی ہدایت پر ریلوے اسٹیشن تا بس اسٹانڈ 500میٹر فاصلے کے کام کیلئے ورک آرڈر دینے کے دیڑھ سال بعد بھی یہ کا کام مکمل نہیں کیاگیا۔کام میں تاخیر پر گتہ دار کو نوٹس بھی جاری کیاگیا۔گتہ دار کی لاپرواہی سے آج تک یہ کام مکمل نہیں ہوسکا۔جس کا خمیازہ شہریان کواٹھانا پڑرہاہے ۔

گریجویٹ حلقہ انتخاب ووٹرس لسٹ میںاندراج کی آخری تاریخ 6نومبر

ناندیڑ:یکم نومبر ۔(ورق تازہ نیوز)اورنگ آباد حلقہ گریجویٹ کے فہرست رائے دہندگان میں نام اندراج کی آخری تاریخ 6نومبر مقرر ہے اسلئے زیادہ سے زیادہ گریجویٹس افراداپنے ناموں کااندراج اس فہرست میںکرکے حق رائے کااستعمال کریں ۔اس طرح کی اپیل ضلع انتظامیہ نے کی ۔یکم اکتوبر تا 6نومبرتک فہرست رائے دہندگان میںنام اندراج کی مہم چلائی جارہی ہے ۔سال 2014ءکے گریجویٹ حلقہ انتخاب فہرست رائے دہندگان میں 31ہزار624ووٹرس نے اندراج کروایا تھا اب یہ فہرست منسوخ ہوگئی ہے او ر سال 2019ءکے گریجویٹ حلقہ انتخاب کے چناوکیلئے ازسرنو فہرست کی تیاری کی جارہی ہے ۔اسلئے گریجویٹس افراد 6نومبر تک اپنے ناموں کااندراج کریں۔