ناندیڑ:10جون۔ (ورق تازہ نیوز)ضلع میں یکم جون سے انلاک کاعمل شروع ہوگیا ہے اسلئے ہرطرح کے کاروبار کھل گئے ہیں لیکن عوام میں کورنا کے تئیں سنجیدگی نظر نہیں آرہی ہے اوربازاروں میںبے تحاشہ ہجوم نظرآرہا ہے ۔ناندیڑضلع کاکورونا کومثبت تناسب 1.7 ہے جس کی وجہہ سے پہلے مرحلے میںناندیڑ کو پوری طرح ان لاک کیاگیا ہے ۔لیکن کوورنا کوخطرہ ابھی ٹلا نہیں ہے اور آئندہ چند ماہ میں تیسری لہر کا خدشہ ماہرین نے ظاہر کیا ہے۔

اسلئے عوام کی ذمہ داری ہے کہ وہ کوروناقوانین پرعمل کرتے ہوئے احتیاط برتیں ۔ان خیالات کااظہار ضلع کلکٹر ڈاکٹرویپن اٹنکر نے کیا۔انھوںنے اس بات کابھی واضح اشارہ دیاکہ اگر ضلع کاپازیٹیویٹی ریٹ 5فیصد سے اوپر ریکارڈ ہوا تودوبارہ ضلع میں لاک ڈاون نافذ کیاجاسکتا ہے ۔

کورونا وباءکے پیش نظر کئے گئے اقدامات کے ضمن میں وہ اخباری نمائندوں سے بات چیت کررہے تھے۔اس موقع پر ضلع پریشدچیف آفیسرورشاٹھاکور گھوے ]ایس پی پرمود کمار شیوالے‘ضلع ہیلتھ آفیسر ڈاکٹربالاجی شندے ‘ضلع سیول سرجن ڈاکٹرنیل کنٹھ بھوسی کر وغیرہ موجود تھے۔