• 425
    Shares

مہوبہ: اترپردیش کے ضلع مہوبہ کے پنواڑی علاقے میں عیسائی مشینری کے ذریعہ تبدیلی مذہب کی مبینہ سازش کا انکشاف کر نے کے دعوی کے ساتھ پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کیا ہے۔ اڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس آر کے گوتم نے اتوار کے روز یہاں بتایا کہ سمریا گاؤں کے باشندوں سے موصول شکایت پر پولیس نے کل شام آشیش جان نامی شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔ جس کے قبضے سے بھاری مقدار میں مذہبی مواد برآمد کیا گیا ہے۔

آشیش جان نامی شخص پر الزام ہے کہ مذہبی مبلغ کے طور پر گاؤں میں جاکر غریب اور بھولے۔ بھالے مقامی افراد کو ان کا تبدیلی مذہب کراتا تھا۔ وہ عوامی افراد کو مبینہ طور پر مختلف قسم کے لالچ بھی دیتا تھا۔ اور تمام طرح کی من گڑھت کہانیاں سنانے، پڑھانے کے لئے مذہبی ادب کا مواد مفت تقسیم کر کے ان کا برین واش بھی کرتا تھا۔

اڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس آر کے گوتم نے بتایا کہ ملزم آشیش جان بلیا کا رہنے والا ہے۔ وہ گزشتہ تقریباً آٹھ سالوں سے پنواڑی قصبے میں ایک مکان میں کرائے پر رہتے ہوئے اپنے کام کو انجام دے رہا تھا۔ پولیس نے اس کے خلاف تبدیلی مذہب ایکٹ ۔2020 کے تحت مقدمہ درج کر کے جیل بھیج دیا ہے اور جانچ شروع کر دی ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔