نئی دہلی ۔ سپریم کورٹ نے کورونا وائرس کی عالمی وبا کے تیزی سے پھیلنے کے سبب اترپردیش کے پانچ شہروں میں لاک ڈاؤن نافذ کرنے کے الہ آباد ہائی کورٹ کے فیصلے پر منگل کے روز روک لگادی۔ ہائی کورٹ نے حکومت اتر پردیش کو کورونا وائرس کی سنگین صورتحال کے پیش نظر پریاگراج، لکھنؤ، کانپور ، بنارس اور گورکھپور میں 26 اپریل تک مکمل تالا بندی نافذ کرنے کی ہدایت دی تھی۔ چیف جسٹس شرد اروند بوبڑے ، جسٹس اے ایس بوپنا اور جسٹس وی رما سبرمنیم پر مشتمل ڈویژن بنچ نے سالیسٹر جنرل تشارمہتا کے دلائل سننے کے بعد ہائي کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد روک دی اور دو ہفتوں کے بعد معاملے کی سماعت کا فیصلہ کیا۔ حکومت اترپردیش کی جانب سے پیش ہونے والے مسٹر تشار مہتا نے دلیل دی کہ عدالتی حکم کے ذریعے پانچ شہروں میں مکمل تالا بندی انتظامی مشکلات کا سبب بنے گی۔ دریں اثناء، عدالت عظمی نے ریاستی حکومت کو اگلی سماعت تک کورونا وائرس کی وبا سے نمٹنے کے لئے کی جانے والی کوششوں کی معلومات فراہم کرنے کی ہدایت دی۔ مسٹر تشار مہتا نے اتر پردیش حکومت کی جانب سے آج صبح اس معاملے کا خصوصی ذکر کرکے اس کی جلد سماعت کرنے کی درخواست کی تھی، جسے بنچ نے قبول کرلیا اور پہلے سے درج تمام مقدموں کی سماعت کے بعد ریاستی حکومت کی اپیل پر غور کیا۔ بنچ نے سینئر ایڈووکیٹ پی ایس نرسمہا کو اس معاملے میں رفیق عدالت مقرر کیا۔


اپنی رائے یہاں لکھیں