نئی دہلی : قومی دارالحکومت دہلی میں 26 جنوری کو تشدد کا جو واقعہ پیش آیا تھا، اس تعلق سے کرائم برانچ کی ٹیم گرفتار دیپ سدھو اور اقبال سنگھ کو لے کر آج لال قلعہ پہنچی۔ یہاں یوم جمہوریہ پر ہوئے تشدد واقعہ کو ’ری کریئیٹ‘ (دوبارہ منظر کشی) کیا گیا۔ قابل ذکر ہے کہ پوچھ تاچھ کے دوران دیپ سدھو نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ جذباتی ہو کر کسانوں کے ساتھ جڑ گیا تھا اور کسی شدت پسند تنظیم کے ساتھ اس کا کوئی رشتہ نہیں ہے۔ حالانکہ اس نے اس بات کا اعتراف کیا کہ وہ توڑ پھوڑ والی ذہنیت رکھتا ہے۔


اپنی رائے یہاں لکھیں