ہندو بزرگ کی آخری رسومات کے لیے مسلمان آگے آئے، ‘رام نام ستیہ ہے کہہ کر الوداع کہا، ویڈیو وائرل

11

پٹنہ :(ایجنسیز)اس زمین پر رہنے والا ہر شخص انسان ہے۔ ہندو ہو یا مسلمان، سب ایک ہیں۔ اگرچہ بہت سے لوگ ایسے ہیں جو اپنے فائدے کے لیے دونوں مذاہب کے درمیان جھگڑے اور باہمی دشمنی پھیلا رہے ہیں لیکن کچھ لوگ ایسے بھی ہیں، جو بھائی چارے کو زندہ رکھے ہوئے ہیں۔ ایسا ہی معاملہ بہار میں دیکھنے کو ملا ہے۔ یہاں ایک مسلمان خاندان نے ایک ہندو بزرگ کی آخری رسومات ادا کر کے ثابت کر دیا کہ انسانیت سے بڑا کوئی مذہب نہیں ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق دارالحکومت پٹنہ میں متوفی رام دیو ساہ گزشتہ 25 سال سے رضوان کی دکان پر کام کر رہا تھا۔ رام دیو ٗرضوان کے لیے ایک خاندان کی طرح تھے۔ ایسی صورت حال میں آخری رسومات کے لیے پورے خاندان کو ہندو رسم و رواج کے مطابق میت کے ساتھ موجود رہے۔ اس کی ایک ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے۔سوشل میڈیا پر جو ویڈیو وائرل ہو رہا ہے، اس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ رام دیو کی موت کے بعد کیسے محمد رضوان اور اس کا خاندان ہندو رسم و رواج کے مطابق آخری رسومات ادا کر رہے ہیں۔ اس ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ آخری سفر کے دوران رام نام ستیہ ہے بھی بولا جا رہا ہے۔

 ایک رپورٹ کے مطابق 25 سال قبل رام دیو گھومتے پھرتے محمد رضوان کی دکان پر آیاتھا۔ ارمان نے رام دیو کو اپنی دکان پر کام پر رکھا تھا۔ رام دیوٗ رضوان کی دکان پر اکاؤنٹ کا کام دیکھتا تھا۔ 75 سال کی عمر میں ان کی موت کے بعد رضوان اور ان کے اہل خانہ نے رام دیو کی آخری رسومات ادا کیں۔