ہریدوار، 15 اپریل (یو این آئی) اتراکھنڈ کے ہریدوار میں جاری مہاکمبھ میلے میں کورونا وائرس کا سایہ مسلسل منڈلا رہا ہے، جہاں کورونا وائرس کی وجہ سے نافذ معیاری طریقہ کار (ایس او پی) کی بدولت مہاکمبھ کے دونوں شاہی اسنان پھیکے پڑگئے اور بیراگی اکھاڑوں میں سے ایک نروانی اکھاڑہ کے مہامنڈلیشور کپّل منی کورونا وائرس کی زد میں آنے کے باعث فوت ہوگئے۔


میلے ہیلتھ آفیسر ارجن سنگھ سینگر نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ یہاں نروانی اکھاڑہ کے مہامنڈلیشور کورونا وائرس سے متاثر ہوگئے تھے، جسے دہرادون کے پرائیویٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جہاں اس کی موت ہوگئی۔ انہوں نے کہا کہ اکھاڑے میں سنتوں کی کورونا جانچ کا دائرہ وسیع کیا جائے گا اور جو لوگ مہلوکہ سنت کے ساتھ رابطے میں آئے تھے ان کی جانچ کے ساتھ ساتھ ان کو الگ تھلگ بھی کیا جائے گا۔


ہریدوار میں کورونا وائرس کے متاثرین میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، جس کی وجہ سے تمام پرائیویٹ اور سرکاری اسپتالوں میں کورونا کے مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔قابل ذکر ہے کہ اب تک کورونا وائرس کی وجہ سے آئی آئی ٹی روڑکی میں 120 سے زیادہ طلبہ اور اساتذہ متاثر ہوچکے ہیں۔