ہاردک پٹیل نے گجرات الیکشن سے چند ماہ قبل کانگریس استعفیٰ دے دیا، پارٹی کو بڑا جھٹکا : بی جے پی میں شمولیت ممکن

نئی دہلی: کئی دنوں تک ناراض رہنے کے بعد، گجرات کے رہنما ہاردک پٹیل نے آج استعفیٰ کے ساتھ کانگریس کو الوداع کہہ دیا۔ جنہیں راہل گاندھی نے 2019 میں پارٹی میں شامل کیا گیا ۔

ہاردک پٹیل نے اپنے استعفی میں کہا کہ گجرات کانگریس اعلی لیڈران کیلئے "چکن سینڈوچ” کو یقینی بنانے میں زیادہ دلچسپی رکھتی تھی۔

ذرائع نے بتایا کہ ہائی پروفائل پاٹیدار لیڈر گزشتہ دو مہینوں سے بی جے پی قیادت کے ساتھ رابطے میں ہیں اور امکان ہے کہ وہ ایک ہفتہ کے اندر حکمراں پارٹی میں شامل ہو جائیں گے۔ ہاردک پٹیل نے اب تک کانگریس سے بی جے پی کی تبدیلی کی سختی سے تردید کی ہے جو پچھلے دو سالوں میں کئی نوجوان لیڈروں نے کی ہے۔

ہاردک پٹیل کا کانگریس صدر سونیا گاندھی کو استعفیٰ دینے والے خط کا مقصد راہول گاندھی پر تنقئید ہے، جنہوں نے اپنے حالیہ دورہ گجرات کے دوران ان سے الگ سے ملاقات نہیں کی۔

ہاردک پٹیل نے لکھا، ’’جب میں سرکردہ لیڈروں سے ملا، تو وہ گجرات کے مسائل کو سننے کے برعکس اپنے موبائل فون میں پریشان نظر آئے،‘‘ ہاردک پٹیل نے مزید لکھا۔ "گجرات کے سینئر لیڈر اس بات کو یقینی بنانے میں زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں کہ اجلاس کے دوران عوامی مسائل پر زور دینے کے بجائے دورے پر آنے والے لیڈروں کو چکن سینڈویچ دستیاب ہوں۔ ”

بی جے پی سمیت ناقدین کی طرف سے راہول گاندھی پر تنقید کی بازگشت کرتے ہوئے، ہاردک پٹیل نے آگے بڑھتے ہوئے کہا، "ہمارے رہنما بیرون ملک تھے جب انہیں نازک وقت میں ہندوستان میں ضرورت تھی۔”