سنگھود : گجرات کے ضلع جنوبی تاپی میں واقع تاریخی ٹاؤن سنگھود میں چند غنڈوں نے مسجد کا قفل توڑ کر قرآن مجید کی بے حرمتی کی۔ قرآن مجید کے کئی نسخوں کو آگ لگائی اور دیگر کتابوں کو بھی جلا دیا۔ پولیس انسپکٹر ایچ سی روہل نے کہا کہ کسی کو بھی گرفتار نہیں کیا گیا البتہ نامعلوم افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کیا گیا ہے۔

گجرات مائناریٹی کوآرڈینیشن کمیٹی کے کنوینر مجاہد نفیس نے چیف منسٹر وجئے روپانی کو مکتوب لکھتے ہوئے اس واقعہ کے خلاف احتجاج کیا اور خاطیوں کو سخت سزاء دینے کا مطالبہ کیا۔

یہ واقعہ ریاست میں امن و درہم برہم کرنے کی کوشش ہے۔ جماعت اسلامی ہند گجرات کے سکریٹری واصف حسین نے اس واقعہ کی مذمت کی اور کہا کہ خاطیوں کو فوری سزاء دینی چاہئے۔ 10 دن قبل ہی ضلع کَچھ میں فرقہ وارانہ فساد پھوٹ پڑا تھا۔ وی ایچ پی کے جلوس کے دوران تشدد سے ایک شخص ہلاک ہوا


اپنی رائے یہاں لکھیں