پلکّڑ/ کنّور، 17 نومبر (یو این آئی) کیرالا میں راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے رہنما کے قتل کی جگہ کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد اسے دیکھ کر ایک شخص کی موت ہوگئی۔پلکّڑ میں سڑک کے کنارے ایک مقامی کارکن کو قتل کر دیا گیا اور اس تصویر کو دیکھ کر عوام خوفزدہ ہوگئے۔ ذرائع نے بدھ کو بتایا کہ اس واقعہ کے بعد اب آر ایس ایس اور بی جے پی کے کارکن خود کو غیر محفوظ محسوس کر رہے ہیں۔

آر ایس ایس کے بَودّھِک پرمُکھ سنجیت (27) کو دن دہاڑے ایک گینگ نے اس وقت قتل کر دیا جب وہ اپنی بیوی کے ساتھ موٹر سائیکل پر جا رہے تھے۔ سنجیت پر الزام تھا کہ وہ سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کا کارکن تھا۔ وہ ایلاپلّی کے قریب ایڈوپُکّلم کا رہنے والے تھے۔بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ریاستی صدر کے سریندرن نے اس واقعہ کی این آئی اے سے تحقیقات کروانے کا مطالبہ کیا ہے۔

حال ہی میں ایلاپلی میں آر ایس ایس اور ایس ڈی پی آئی کارکنوں کے درمیان ہاتھا پائی کی خبر آئی تھی۔کچھ مہینے پہلے سنجیت کی چائے کی دکان پر ایس ڈی پی آئی کارکنوں نے توڑ پھوڑ کی تھی۔ اس معاملے کی تحقیقات کرنے والی خصوصی تفتیشی ٹیم کو چار تلواریں ملی ہیں، شبہ ہے کہ یہ ہتھیار قتل میں استعمال ہوئے ہوں گے۔ یہ تلواریں پلکڑ قصبہ سے تقریباً 12 کلومیٹر دور کنّور میں قومی شاہراہ کے قریب سے برآمد ہوئی ہیں۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔