کٹیہار میں مسجد پر شرپسندوں کا حملہ، داخلی دوازے کا گنبد شہید

کٹیہار: (احمد حسین قاسمی) گزشتہ رات بہارریاست کے  کٹیہار کے اعظم نگر بلاک کے پیکوان گاؤں میں کچھ شر پسند عناصر کے ذریعہ علاقہ کی باہمی محبت و بھائی چارہ کو نفرت و فساد سے بدلنے کی کوشش کی گئی ،مرحوم ایم ایل اے عبد الجلیل کے فرزند آرجے ڈی نیتا صیاد عالم عرف پنکو بھائی کے مطابق چند شرپسند نوجوان شراب کے نشے میں مدہوش مسجد کے دروازہ کے پاس آئے اور انہوں نے مسجد کے دروازہ کے گنبد کو توڑنا شروع کردیا اور اس گنبد کو شہیدبھی کردیا وہ فسادی اندر داخل ہورہے تھے غلط ارادہ سے لیکن اس وقت رات دس بجے ایک نمازی نماز سے فارغ ہوکر باہر حال یہ کہ اسے کچھ آوازیں محسوس ہورہی تھی ہتھوڑے وغیرہ کی جب وہ باہر نکلا تو وہ سارے فسادی بھاگ کھڑے ہوئے masjed

لیکن انہوں نے ان کے چہرے پہچان لئے اور اس نے ہنگامہ کیا کچھ ہی لمحہ میں یہ خبر جنگل کی آگ کی طرح پورے علاقہ میں پھیل گئی اور آناً فاناً ہزاروں کی تعداد میں لوگ جمع ہوگئے جوں ہی اس حادثہ کی اطلاع پولس محکمہ کو ہوئی ڈی ایم، ایس پی ،ڈی ایس پی اور کئی تھانوں کی پولس نے علاقہ کو چھاؤنی میں تبدیل کردیا ، پنکو بھاٸی کے مطابق پولس نےملزمین پر ایف آٸی آر درج کر دو کو حراست میں لے لیا ہے اور اس پورے واقعہ کے اسباب وعوامل پر غور وخوض کیا جارہا ہے ، واضح ہوکہ موقع واردات پر علاقائی لوگوں نے مجرمین کے خلاف خوب ہنگامہ کیا اور اس معاملہ کے مجرمین کو پھانسی دینے کا مطالبہ کیا تاہم پولس محکمہ کی یقین دہانی پر کہ مجرمیں کو ضرور کیفر دار تک پہنچایا جائے گا لوگوں نے ہنگامہ ختم کردیا اور اپنے گھروں کو چلے گئے ،جمعیت علما اعظم نگر کے صدر مولانا عماد الاسلام کے مطابق پولس اس معاملہ میں سنجیدہ نہیں ہے جو لوگ مختلف گاؤں دھوم نگر ،کھریال ، کھوپرا اعظم نگر سے آئے، ان پر قانون کی خلاف ورزی کی بات کہ کر ان پر مقدمہ درج کرنے کا انتباہ دے رہی ہے اور کئی حساس علاقوں پولس بل تعینات کردئیے گئے ہیں تاکہ کوٸی بھی ناخوشگوار معاملہ نہ ہو ۔