ممتا بنرجی نے الزام لگایاکہ ووٹ ڈالنے کے لئے قطار میں کھڑے لوگوں پر مرکز پولیس نے گولی چلائی ہے اور واقعہ کی ذمہ داری لیتے ہوئے ”امیت شاہ کے استعفیٰ“ کا مطالبہ کیا۔

کلکتہ۔چیف منسٹر ممتا بنرجی نے ہفتہ کے روز کوچ بیہار کے سیتل کوچی میں مرکزی دستوں کی فائرینگ میں چار لوگوں کی موت پر مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ سے استعفیٰ کی مانگ کی ہے۔

بنرجی نارتھ24پارگاناس کے بدروائی میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ریالیاں میں شرکت کے بعد وہ کوچ بیہار روانہ ہوں گے‘ اور اس مقام پر معائنہ کریں گے جہاں پر مرکزی دستوں نے پولنگ کے دوران گولیاں چلائی ہیں۔

لوگوں سے پرامن رہنے کی اپیل کرتے ہوئے ممتا بنرجی نے الزام لگایاکہ ووٹ ڈالنے کے لئے قطار میں کھڑے لوگوں پر مرکز پولیس نے گولی چلائی ہے اور واقعہ کی ذمہ داری لیتے ہوئے ”امیت شاہ کے استعفیٰ“ کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے اس کو سفاکانہ قتل قراردیاہے۔انہوں نے کہاکہ ٹی ایم سی اتوار کے روز ریاست بھر میں احتجاجی ریالیاں نکالے گی اورپارٹی کارکنوں سے استفسار کیاکہ سیاہ پٹیاں باندھے اوران ہلاکتوں کے خلاف 2بجے دوپہر سے 4بجے شام تک پرامن احتجاج کریں۔

ہنگال گنج میں اس سے قبل بات کرتے ہوئے مذکورہ چیف منسٹر نے دعوی کیاکہ”مرکزی دستوں نے ووٹ دینے کے لئے قطار میں کھڑے لوگوں پر گولیاں چلائیں‘ سیتل کوچی میں چار لوگوں کو ہلا ک کردیاہے“۔

انہوں نے کہاکہ مجھے کافی عرصہ سے خدشہ تھا کہ یہ دستے”اس انداز میں کاروائی کریں گے“۔

بنرجی نے مزیدکہاکہ”کیونکہ بی جے پی جانتی ہے کہ وہ لوگوں کی پسند سے محروم ہوچکی ہے‘ وہ لوگوں کو ہلاک کرنے کی سازش کررہے ہیں“۔انہوں نے الزام لگایاکہ یونین ہوم منسٹر کی جانب سے رچی گئی سازش کا یہ حصہ ہے۔

انہوں نے کہاکہ ”تاہم میں ہر کسی سے کہہ رہے ہوں کہ وہ پرامن رہیں اور پرامن انداز میں ووٹ ڈالیں۔ان اموات کا بدلہ انہیں شکست دے کر لیں“۔

بنرجی نے کہاکہ اس الیکشن میں اموات کی تعداد تین سال قبل پیش ائے پنچایت انتخابات سے زائد ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ ”اگر آپ تعداد کی گنتی کریں گے تو انتخابات کے آغاز سے اب تک 17-18لوگوں کو ہلاک کردیاگیاہے۔

کم سے کم 12لوگ ہمارے پارٹی کے ہیں“۔ بنرجی نے کہاکہ آج کے واقعہ پر الیکشن کمیشن لوگوں کو جواب دیں۔

انہوں نے اشارۃً کہاکہ ”ہم انتظامیہ کے انچارج نہیں ہیں۔

الیکشن کمیشن انچارج ہے“۔انہوں نے کہاکہ”انہوں نے سینئر افیسر سورجیت کار پورکیستا کو ہٹادیا۔

انہوں نے او ایس ڈی اشوک چکربرتی کو ہٹادیا‘ جو آر پی ایف کے کم رتبہ کے والے ریٹائرڈ ایک افیسر ہیں۔ پھر ای سی نے ریٹائرڈ افسران کو یہاں پر انتخابات کی نگرانی کے لئے لے کر آیاہے“


اپنی رائے یہاں لکھیں