کوویڈ – 19 ٹیسٹ کے نام پر خاتون کے پوشیدہ مقام کی تشخیص ، ملزم لیب ٹیکنیشن گرفتار

0

ممبئی 30جولائی ((یواین آئی ):مہاراشٹرا کے امراوتی شہر میں کوویڈ – 19 ٹیسٹ کے نام پر خاتون کے پوشیدہ مقام کی تشخیص کرنے کے الزام میں آج یہاں ایک سرکاری اسپتال کے لیب لیب ٹیکنیشن کوگرفتارکیا گیا ہے اس پر مزید الزام یہ ہےکہ اس نے متاثرہ خاتون کی عصمت دری کرنے کی بھی کوشش کی۔موصولہ اطلات کے مطابق اس معاملے کے تحقیقاتی آفیسر پنجاب وانجاری نے بتایا کہ یہ واقعہ منگل (28 جولائی) کو اس وقت پیش آیا جب شکایت کرنے والے 23 سالہ خاتون ضلع کے بدنیرا کے سرکاری اسپتال میں ٹراما کیئر ٹیسٹنگ لیب میں کوویڈ ٹیسٹ کے لئےگئ تھی۔یہ خاتون ، ایک شاپنگ مال کی ملازمہ ہے ،جوکوروناسے متاثرہ اپنے ایک ساتھی کے رابطے میں آئی تھی ۔ اسے 20 دیگر افراد کے ساتھ ٹی سی ٹی ایل کورونا ٹیسٹ کے لئے بھیجا گیا تھا۔

ٹیسٹ کے بعد ، ملزم ٹیکنیشن ،جس کی شناخت 30 سالہ الپیش اے دیشمکھ کی حیثیت سے کی گئی ہے ، نے شکایت کنندہ کو فون کرکے کہاکہ اس کا کوویڈ ٹیسٹ مثبت آیاہےاور اس کے لئے اس کا دوسرا پیشاب ٹیسٹ کروانا پڑے گا۔وانجاری نے کہا ، ’’جب اس نے پوچھا کہ کیا دوسرے ٹیسٹ کے لئے کوئی خواتین ٹیکنیشن نہیں ہیں ، توملزم نے اس کا جواب نفی میں دیا ، اورکہاکہ اگر وہ چاہے تو اسے خاتون ساتھی لانے کی اجازت ہے ‘‘۔دیشمکھ نے خاتون کی جانچ کی اور بعد میں اسے آگاہ کیا کہ یہ ٹیسٹ منفی ہے ، جس سے خاتون کے ذہن میں شکوک و شبہات پیدا ہوگئے ہیں۔اس نے اپنے بھائی سے بات کی جس نے ایک ڈاکٹرسے معلوم کیاجس نے تصدیق کی کہ کوویڈ کے لئے کسی پوشیدہ مقام کی تشخیص کی ضرورت نہیں ہوتی ہیں۔اس نے فوراً ہی شکایت درج کروائی اور ہم نے ملزم کو گرفتار کرلیا۔ اسے عدالت میں پیش کیا گیا اور 31 جولائی تک اسے پولیس تحویل میں بھیج دیا گیا ہے۔

مہاراشٹرا کی وزیر برائے بہبود خواتین و اطفال یشومتی ٹھاکر ، جو امراؤتی ضلع کی سرپرست وزیر بھی ہیں ، نے اس کی سخت لفطوں میں مذمت کی ہے اور ملزم کو سخت ترین سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ملزم ٹیکنیشن پر آئی پی سی سیکشن کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ ٹھاکر نے ایک بیان میں کہا کہ ملزم کو بخشا نہیں جائے گا۔یہ حیرت انگیز ہے کہ اس طرح کا واقعہ کسی ضلع میں پیش آسکتا ہے جس نے ہندوستان کو اپنی پہلی خاتون صدر (پرتبھا پاٹل) کی حیثیت سے نوازا تھا ‘‘۔اس واقعہ کی پرزور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ، بھومتا رنراگینی بریگیڈ کی صدر ترپتی دیسائی نے کہا کہ پہلی خاتون صدر کے علاوہ ، امراوتی ضلع میں ایک خاتون وزیر اور سرپرست وزیر ، ایک خاتون رکن پارلیمنٹ نونیت کوررانا ہیں اور ایسے میں اس طرح کےواقعہ کاہوناحیرت انگیز ہے ۔