کورونا کی ’چوتھی لہر‘ کے لیے ہو جائیے تیار، تحقیق میں ممکنہ تاریخ کا انکشاف

0 4

انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (آئی آئی ٹی) کانپور کے محققین نے ایک تحقیق کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان میں کورونا وائرس انفیکشن کی چوتھی لہر 22 جون کے آس پاس آنے کا خدشہ ہے اور اگست کے وسط سے آخر تک اس کا عروج دیکھنے کو مل سکتا ہے۔ ابھی ہندوستان میں تیسری لہر کا اثر پوری طرح سے ختم بھی نہیں ہوا ہے اور چوتھی لہر کے تعلق سے ظاہر کیے جا رہے اندیشوں نے لوگوں کی فکر میں اضافہ کر دیا ہے۔

میڈریو‘ رسالہ میں حال ہی میں شائع ہوئی تحقیق کا تذکرہ کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ فی الحال تحقیق کا حتمی نتیجہ برآمد نہیں ہوا ہے، لیکن کورونا کی چوتھی لہر جون میں آنے کا خدشہ ہے۔ محققین نے اسٹیٹسٹک ماڈل کی بنیاد پر یہ اندازہ ظاہر کیا ہے اور اس کے مطابق ممکنہ چوتھی لہر کا اثر تقریباً چار ماہ رہے گا۔ آئی آئی ٹی کانپور کے ریاضی اور اسٹیٹسٹکس محکمہ کے سابرا پرساد راجیش بھائی، سبھر شنکر دھر اور شلبھ کی قیادت میں کی گئی تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ چوتھی لہر کی سنگینی کورونا وائرس کے نئے ممکنہ ویریئنٹ اور ملک بھر میں ٹیکہ کاری کے حالات پر منحصر کرے گا۔

اس تحقیق میں شامل ماہرین کے مطابق اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ ہندوستان میں انفیکشن کی چوتھی لہر ابتدائی اعداد و شمار دستیاب ہونے کی تاریخ کے 936 دن بعد آئیں گے، جو کہ 30 جنوری 2020 ہے۔ انھوں نے لکھا ہے کہ ’’اس لیے چوتھی لہر 22 جون 2022 سے شروع ہوگی اور 23 اگست 2022 تک عروج پر پہنچے گی اور پھر 24 اکتوبر 2022 تک ختم ہو جائے گی۔‘‘