سابق وزیراعظم کا نریندرمودی کو مکتوب

نئی دہلی : سابق وزیراعظم و سینئر کانگریس قائد منموہن سنگھ نے ملک میں کورونا وائرس کی سنگین صورتحال پر وزیراعظم نریندر مودی کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے اس سے نمٹنے کیلئے کچھ تجاویز پیش کیں۔ وزیراعظم کے نام اپنے مکتوب میں منموہن سنگھ نے ٹیکہ اندازی میں اضافہ پر زور دیا ہے اور ساتھ ہی یہ تجویز پیش کی ہیکہ مخصوص تعداد کے بجائے آبادی کے بڑے حصہ کو ٹیکہ لگوانا چاہئے۔ 88 سالہ سابق وزیراعظم نے ٹیکہ اندازی کی کوششوں میں اضافہ پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ مقررہ مدت میں مخصوص نشانہ کی ٹیکہ اندازی کی جاتی ہے تو پیشگی اس کے آرڈرس دینا چاہئے تاکہ ویکسین کی بروقت تیاری کے ساتھ اس کی سربراہی اور ٹیکہ اندازی کے نشانہ کو حاصل کیا جاسکے۔ شفاف فارمولے کی بنیاد پر ریاستوں کو مقررہ سربراہی بروقت کی جانی چاہئے۔ مرکزی حکومت کو ایمرجنسی ضرورتوں کی بنیاد پر 10 فیصد حصہ اپنے پاس رکھنا چاہئے جبکہ ریاستوں کو ویکسین کی دستیابی سے متعلق واضح اشارے ملنے چاہئے تاکہ وہ اپنی ٹیکہ اندازی کے پروگرام کی مؤثر انداز میں منصوبہ کرسکے۔ منموہن سنگھ نے کہا کہ تعمیری تعاون کے جذبہ کے ساتھ وہ اپنی تجاویز حکومت کو پیش کررہے ہیں جس پر وہ ہمیشہ ایقان رکھتے ہیں۔ منموہن سنگھ نے یہ تجاویز اتوار کو پیش کی جبکہ ایک دن قبل ہی کانگریس ورکنگ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں کوروناوائرس وبا سے لڑنے کیلئے مطلوبہ کوششوں اور اقدامات پر تبادلہ خیال کیا جائے۔ ہندوستان میں کورونا کی وباء قہر ڈھا رہی ہے اور گذشتہ 4 دنوں سے یومیہ 2 لاکھ سے زیادہ نئے مریضوں اضافہ ہورہا ہے۔


اپنی رائے یہاں لکھیں