کسی کا بھی گھر توڑ دیں گے؟‘ پٹنہ ہائی کورٹ کے جج نے پولیس کو لگائی پھٹکار

404

پٹنہ ہائی کورٹ کے جج نے آج بلڈوزر کارروائی کے خلاف بے حد سخت تبصرہ کیا ہے۔ دراصل پٹنہ ہائی کورٹ کے جج نے ایک خاتون کے گھر کو مبینہ طور پر منہدم کیے جانے کے لیے بہار پولیس کو پھٹکار لگاتے ہوئے کہا ہے کہ ’’کیا یہاں بھی بلڈزر چلنے لگا؟ آپ کس کی نمائندگی کرتے ہیں.

کسی کا بھی گھر بلڈوزر سے توڑ دیں گے؟‘‘ جج کے اس تلخ تبصرہ کی ویڈیو اب سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے۔

ہائی کورٹ کے جج نے پولیس انتظامیہ کی کارروائی پر عتراض ظاہر کرتے ہوئے اپنے حکم میں لکھا ہے کہ پولیس انتظامیہ نے اراضی مافیا سے رشوت لے کر قانون کی خلاف ورزی کی ہے اور متاثرہ کا گھر بلڈوزر سے گروا دیا۔ اس کے ساتھ ہی جج نے بے حد غصے میں کہا کہ اگر تھانہ پر ہی سبھی فیصلے کرنے ہیں تو سول کورٹ کو بند کروا دیجیے۔

ساتھ ہی جج نے متاثرہ کو اس بات کی یقین دہانی بھی کرائی کہ اس معاملہ میں تھانہ سمیت جن بھی افسران نے قانون کے خلاف کام کیا ہے، وہ ان کی جیب سے 5 لاکھ روپے وصول کروائیں گے۔