دہلی۔یوم جمہوریہ کے موقع پر دہلی میں کسان ٹریکٹر ریلی کے دوران ہونے والے تشدد کے بعد یہ محسوس کیا جا رہا تھا کہ کسانوں کی تحریک بکھر جائے گی۔ لیکن کسان رہنما راکیش ٹکیٹ کی اپیل کے بعد اس تحریک میں لوگوں کا کئی گنا اضافہ ہوگیا اورغازی پور بارڈر پر کسانوں کی آبادی میں روز بروز مزید اضافہ ہو رہا ہے۔

کسانوں کے بڑھتے جم غفیر کو دیکھتے ہوئے پولیس انتظامیہ کے ہاتھ پاؤں پھولنے لگے ہیں۔ شاید یہی وجہ ہے کہ پولیس نے غازی پور بارڈر پر سیکورٹی سخت کر دی ہے۔

پولیس انتظامیہ پرکتنا دباؤ بڑھا ہے، اس بات کا اندازہ اس سے لگایا جاسکتا کہ کسانوں کی بڑھتی تعداد کے پیش نظر غازی پور بارڈر پر راتوں رات 12 لیئر کی بیریکیڈنگ کر دی گئی ہے۔ نیز، پولیس کی طرف سے نوکیلے تاروں کو بھی لگایا گیا ہے۔ این ایچ 24 کو مکمل طور پر بند کردیا گیا ہے۔ نوئیڈا سیکٹر 62 سے اکشردھم جانے والی سڑک بھی مکمل طور پر بند کردی گئی ہے۔